25 جولائ, 2014 | 26 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

عدالت کا 423 کراچی پولیس افسران معطل کرنے کا حکم

۔—فائل فوٹو
۔—فائل فوٹو

کراچی: کراچی بدامنی عمل درآمد کیس کی سماعت کےدوران سپریم کورٹ نے چارسو تیئس پولیس افسران کو معطل کرنے کا حکم دیتے ہوئے آئی جی پولیس فیاض لغاری کو شوکاز نوٹس جاری کردیا ہے۔ کیس کی سماعت کل تک ملتوی کردی گئی۔

جسٹس انور ظہیر جمالی کی سربراہی میں قائم لارجر بینچ نے سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں کراچی بدامنی عمل درآمد کیس کی سماعت کی۔

سماعت کے دوران سپرریم کورٹ نے آئی جی سندھ فیاض لغاری پر برہم ہوتے ہوئے کہا کہ محکمہ میں خامیوں اورخرابیوں کے ذمہ  وہ خود ہیں۔

عدالت نے انہیں شوکاز نوٹس جاری کیا۔

عدالت نے کہا کہ سنگین جرائم میں ملوث اہلکار اب بھی ڈیوٹی انجام دے رہے ہیں اور جرائم پیشہ پولیس افسران حساس مقامات پر بھی تعینات ہیں۔

گزشتہ روز ہونے والی سماعت میں سپریم کورٹ میں چیف الیکشن کمیشن کی جانب سے کراچی میں ازسر نو انتخابی حلقہ بندیوں کے حکم پر نظرثانی کی درخواست دائر کردی گئی تھی جبکہ عدالت نے متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) کی جانب سے دونوں درخواستیں واپس لینے پر کیس خارج کر دیا تھا۔

جسٹس انور ظہیر نے کہا تھا کہ کراچی میں ٹریفک جام کے دوران شہریوں سے لوٹ مار معمول بن چکی ہے پولیس اور رینجرز تماشائی بنے ہوئے ہیں۔

اس حصے سے مزید

کراچی سمیت سندھ کے مختلف شہروں میں بجلی کا بریک ڈاؤن

کے الیکٹرک کے مطابق نیشنل گرڈ لائن میں فنی خرابی کے باعث پورے کراچی کی بجلی معطل ہے۔

کامران خان نے بھی جیونیوز چھوڑ دیا

صحافی برادری سے تعلق رکھنے والے ذرائع کا کہنا ہے کہ کامران خان عنقریب آنے والے میڈیا گروپ ’’بول‘‘ سے وابستہ ہو رہے ہیں۔

کراچی: رینجرز کی کارروائی میں کالعدم تنظیم کا رکن ہلاک

رینجرز کے مطابق مبینہ دہشت گرد کامرہ ایئر بیس حملے میں ملؤث تھا۔ دوسری جانب شہر میں ٹارگٹ کلنگ کے واقعات جاری رہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

تھوڑا سا احترام

آپ ایک مایوس، خوفزدہ بیوروکریسی سے کیا توقع کرسکتے ہیں جنہیں اپنی سمت کا علم نہ ہو؟

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بلاگ

گھریلو تشدد: پاکستانی 'کلچر' - حقیقت کیا ہے؟

پاکستانی سماج میں عورت مرد کی جائداد اور اس سے کمتر ہے چناچہ اس کے ساتھ کسی قسم کا سلوک روا رکھنا مرد کا پیدائشی حق ہے-

ریاستی تنہائی اور اجتماعی مہاجرت

جب تک سوچنے اور سوچ کے اظہار کے لیے ممکنہ حد تک ازادی موجود نہ ہو تب تک سماج میں تکثیریت پروان نہیں چڑھ سکتی

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔