03 ستمبر, 2014 | 7 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

اولمپکس ہاکی: پاکستان، اسپین کا میچ برابر

کپتان سہیل عباس ایکشن میں۔ – اے ایف پی فوٹو

ڈان ڈاٹ کام سپورٹس ڈیسک: لندن اولمپکس میں پاکستان ہاکی ٹیم نے اپنے سفر کا آغاز میچ ڈرا کرکے کیا۔ گرین شرٹس کا اپنے پہلے میچ میں اسپین سے مقابلہ ایک ایک گول سے برابر رہا۔

پیر کے روز پنیلٹی کارنر اسپیشلسٹ سہیل عباس کی قیادت میں پاکستان نے اولمپک گیمز کا پہلا میچ کھیلا۔ پہلے ہاف میں  پاکستان کو دو پینلٹی کارنرز ملے، لیکن شاندار کوشش کے باوجود کپتان سہیل عباس گیند کو گول میں نہ پھینک سکے۔

دوسرے ہاف کے دسویں منٹ میں ریحان بٹ نے گول اسکور کرکے پاکستان کو برتری دلادی، جسے اگلے ہی منٹ میں اسپین کے کیوماڈا نے برابر کردیا۔

اسکے بعد دونوں ٹیمیں ایک وسرے کے گول پر حملے کرتی رہیں مگر کسی کو کامیابی نہ حاصل ہوئی۔

مجموعی طور پر پاکستانی ٹیم نے زیادہ بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کیا اور بیجنگ اولمپکس میں چاندی کا تمغہ جیتنے والی اسپین کی ٹیم پر حاوی دکھائی دی۔ پورے میچ میں تیز رفتار کھیل دیکھنے کو ملا جسکا اندازہ اسکور کارڈ سے نہیں لگایا جا سکتا۔

حالانکہ کامیابی تو نصیب میں نہیں آپائی لیکن اس ڈرا میچ سے بھی پاکستانی حوصلے ضرور بلند ہوئے ہونگے جو بدھ کے روز انکے اگلے میچ میں ارجنٹینا کے خلاف سودمند ثابت ہو سکتے ہیں۔

اس حصے سے مزید

مصباح کی خراب کارکردگی پاکستانی شکست کی بڑی وجہ

پاکستان کو سری لنکا نے ٹیسٹ سیریز میں دو صفر جبکہ ون ڈے سیریز میں دو ایک سے شکست دی تھی۔

شیراپووا یو ایس اوپن سے باہر، جوکووچ کی پیش قدمی جاری

سرینا ولیمز اور واورنکا بھی کامیاب، جوکووچ اور اینڈی مرے یو ایس اوپن کے کوارٹر فائنل میں مدمقابل ہوں گے۔

آسٹریلیا کو زمبابوے کے ہاتھوں اپ سیٹ شکست

زمبابوے نے سہ ملکی سیریز میں آسٹریلیا کو تین وکٹوں سے اپ سیٹ شکست دے کر 31 سال میں پہلی کامیابی حاصل کرلی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماڈل ٹاؤن کیس: کچھ حماقتیں

حکمرانوں کے منع کرنے پر پولیس کی جانب سے مقتولین کی ایف آئی آر درج کرنے میں تاخیر کی وجہ سے معاملہ مزید خراب ہوا۔

بیوروکریٹس کی یونین

ذاتی مفادات کے لیے چوری چھپے سیاسی ہونے سے زیادہ بہتر ہے کہ ریاست کے وسیع تر مفاد کے لیے کھلے عام سیاسی ہوا جائے۔

بلاگ

ڈرامہ ریویو: 'لا'...الجھتے رشتوں کی کہانی

ڈرامہ پرفیکٹ نہیں بھی تھا تو بھی یہ ان ڈراموں میں سے ایک ضرور تھا جسے دیکھ کر بیزاری کا احساس نہیں ہوتا۔

مووی ریویو : 'راجہ نٹور لال' سٹیریو ٹائپنگ کا شکار ہوگئی

یہ فلم نہ تو مزاح پر پوری اترتی ہے اور نہ ہی اس میں اتنا تھرلر ہے جو اسے ذہن میں نقش کر دے۔

سستا خون: براۓ انقلاب

"انقلاب" سیاست چمکانے کے لیے ایک خوشنما لفظ بن چکا ہے، اور اسے مزید چمکانے کے لیے کارکنوں کا سستا خون بھی دستیاب ہے۔

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔