19 ستمبر, 2014 | 23 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

بلوچستان کابینہ کمیٹی کا کوئٹہ جانے کا فیصلہ

وزیر دفاع سید نوید قمر۔—فائل فوٹو

اسلام آباد: کابینہ کمیٹی برائے بلوچستان نے صوبے میں امن و امان کی صورتحال پر بلوچ عمائدین سےملاقات کےلیے کوئٹہ جانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

کوئٹہ جانے کا فیصلہ کمیٹی کے سربراہ وزیر دفاع سید نوید قمر کی صدارت میں ہونے والے اجلاس میں کیا گیا۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ کمیٹی منگل کو کوئٹہ جائے گی اور امن و امان کی صورتحال کے حوالے سے مقامی بلوچ رہنماوں ،سیاستدانوں اور سماجی شعبے سے ملاقاتیں کرے گی۔

کمیٹی لاپتہ افراد کی بازیابی کے لئے مقامی بلوچ رہنماوں سے تجاویز بھی طلب کرے گی۔

اس کے علاوہ خصوصی کمیٹی بلوچستان میں امن امان کی صورتحال میں بہتری کے لئے سفارشات مرتب کرکے کابینہ کے اجلاس میں پیش کرے گی۔

اس حصے سے مزید

'پی ٹی آئی اور پی اے ٹی کو بیرونی قوتوں کی حمایت حاصل ہے'

جمیعت علمائے اسلام-ف کے رہنما مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا ہے کہ یہ قوتیں ملک کے جوہری اثاثوں پر کنٹرول کرنا چاہتی ہیں۔

بلوچستان: کیچ میں دھماکے سے سیکیورٹی اہلکار قتل

بلوچستان کے ضلع کیچ میں بم دھماکے سے ایک سیکورٹی اہلکار ہلاک ہو گیا، گاڑی مکمل طور پر تباہ ہو گئی۔

بلوچستان کے تین وزراء کے خلاف نیب کی تفتیش کا آغاز

نیب کے ڈائریکٹر سید خالد اقبال کا کہنا تھا کہ ہم تین وزراء کے خلاف کرپشن میں ملؤث ہونے کی شکایات کی تصدیق کررہے ہیں۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مزید جمہوریت

نظام لپیٹ دینے اور امپائر کی باتیں کرنے کے بجائے ہمارا مطالبہ صرف مزید جمہوریت ہونا چاہیے، کم جمہوریت نہیں۔

تبدیلی آگئی ہے

ملک میں شہری حقوق کی عدم موجودگی میں عوام اب وسیع تر بھلائی کا سوچنے کے بجائے اپنے اپنے مفاد کے لیے اقدامات کررہے ہیں۔

بلاگ

شاہد آفریدی دوبارہ کپتان، ایک قدم آگے، دو قدم پیچھے

اس بات کی ضمانت کون دے گا کہ ماضی کی طرح وقار یونس اور شاہد آفریدی کے مفادات میں ٹکراؤ پیدا نہیں ہوگا۔

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔

کراچی میں فرقہ وارانہ دہشتگردی

کراچی ایک مرتبہ پھر فرقہ وارانہ دہشت گردی کی زد میں ہے اور روزانہ کوئی نہ کوئی بے گناہ سنی یا شیعہ اپنی جان گنوا رہا ہے۔

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔