01 اگست, 2014 | 4 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

کراچی میں پرتشدد واقعات جاری، سات ہلاک

کراچی میں تعینات پولیس۔ فائل فوٹو

کراچی: کراچی میں قتل و غارت کا سلسلہ جاری ہے جس کے نتیجے میں مزید سات ہلاک ہوگئے۔

کراچی میں لسبیلہ پل کے قریب دہشت گردوں کی فائرنگ سایک شخص ہلاک ہوگیا۔ ہلاک ہونے والا نوجوان مجلس وحدت المسلمین کا کارکن تھا۔

واقعہ کے بعد علاقہ مکین سڑک پر نکل آئے اور احتجاج کیا۔

اس دوران کاروبار اور دکانیں بھی بند ہوگئیں اور علاقے میں فائرنگ کا سلسلہ بھی شروع ہوگیا۔

فائرنگ کی زد میں آکر دیگر چار افراد زخمی ہوگئے جبکہ ۔زخمی ہونے والا ایک شخص نجی اسپتال میں دوران علاج دم توڑ گیا۔

احتجاج کے باعث لسبیلہ پل سے گولی مار جانے والی سڑک ٹریفک کے لیے بند کردی گئی جس کے بعد پولیس اور رینجرز کی اضافی نفری طلب کرکے تعینات کردی گئی۔

تاہم علاقے میں صورتحال کشدگی برقرار ہے۔

دوسری جانب سولجر بازار کے دکانداروں نے تھانے کےباہر احتجاج کیا۔

مظاہرین نے پولیس کے خلاف نعرے بازی کی۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ موٹر سائیکل سوار ملزمان نے پولیس کی موجودگی میں دودھ فروش کو گولیوں کا نشانہ بنایا اور وہاں موجود افراد نے تعاقب کے بعد ایک ملزم کو پکڑ لیا جسے پولیس چھڑا کر لے گئی۔

مظاہرین نے  مطالبہ کیا کہ ملزم کو ان کے حوالے کیا جائے۔

دوسری جانب بھینس کالونی میں فائرنگ سے ایک شخص ہلاک ہوگیا۔

سہراب گوٹھ جمالی گوٹھ میں سیکیورٹی گارڈ جبکہ نرسری پر ڈاکوؤں کی فائرنگ سے ایک شخص ہلاک اور پیرآباد سیکٹر فور ای میں فائرنگ سے سیاسی جماعت کا کارکن ہلاک جبکہ اسکے دو بھائی زخمی ہوگئے۔

ادھر گلشن اقبال میں پولیس نے کارروائی کرکے دو مبینہ بھتہ خوروں کو گرفتار کرکے اسلحہ برآمد کرنے کا دعوی کیا ہے۔

اس حصے سے مزید

کراچی کے ساحل سے 34 لاشیں نکال لی گئیں

سانحے کے باعث وزیر اعلیٰ ہاؤس میں آج ہونے والی عید ملن کی تقاریب منسوخ کردی گئیں۔

گھوٹکی: غیرت کے نام پر سسر کے ہاتھوں بہو قتل

پولیس نے ملزم کو گرفتار کرلیا ہے، تاہم ملزم کے خلاف کوئی مقدمہ درج نہیں کیا جا سکا۔

کراچی: فائرنگ کے مختلف واقعات میں پانچ افراد ہلاک

رینجرز نے گلشن بونیر میں کارروائی کرکے تین مشتبہ ملزمان کو گرفتار کرلیا، جن کے قبضے سے اسلحہ بھی ہوا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ہمارا پارٹ ٹائم لیڈر

اتنی ناکارہ لیڈرشپ کی مثال مشکل سے ملیگی جس میں کسی دوراندیشی کی کوئی جھلک نہ ہو-

بجٹ اور صحت کا شعبہ

ایسا لگتا ہے کہ صحت کے بجٹ کی بڑھتی ہوئی ضروریات کیلئے عطیات دینے والے ملکوں کے پیسے پر زیادہ انحصار کیا جاتا ہے

بلاگ

پکوان کہانی: موسم گرما کی سوغات 'آم

پرانے وقتوں کے لوگوں کی دلچسپ تصور اور حکمت کی بدولت، پھلوں کا بادشاہ عام انسان کی غذا بن گیا۔

پاکستان میں اسٹارٹ اپس اب تک ناکام کیوں؟

آجکل یہ فیشن سا بن گیا ہے کہ ہر کوئی یہی کہتا نظر آ رہا ہے کہ اس کے پاس 'اسٹارٹ اپ' ہے-

ساغر صدیقی : ایک دل شکستہ شاعر

وہ خوبصورت نظمیں لکھتے، پھر بلند آواز میں خالی نگاہوں سے پڑھتے، پھر ان کاغذات کو پھاڑ دیتے جن پر وہ نظمیں لکھی ہوتیں

پکوان کہانی: کابلی پلاؤ - شمال کی شان

گوشت میں پکے چاول اس خطے کے جنگجوؤں کی ذہنی مطابقت اور جسمانی ساخت کے لیے موزوں تھے۔