21 ستمبر, 2014 | 25 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

رمشا کیس کی سماعت تین ستمبر تک ملتوی

اسلام آباد کی نواحی بستی مہر آباد میں رمشا کے گھر کے باہر لوگ جمع ہیں۔— اے پی فوٹو

اسلام آباد: توہینِ مذہب کے مقدمے کا سامنا کرنے والی نابالغ رمشا کی درخواستِ ضمانت کی سماعت تین ستمبر تک ملتوی کردی گئی ہے۔

مقدمے کی سماعت ہفتہ کو ایڈیشنل سیشن جج اسلام آباد اعظم خان کی عدالت میں ہوئی۔

دورانِ سماعت ملزمہ رمشا کی والدہ نے عدالت کو بتایا کہ مقدمے کی پیروی کرنے والے وکیل سے ان کا کوئی تعلق نہیں۔

 استغاثہ نے دعویٰ کیا کہ ضمانت کی درخواست پر لڑکی یا اس کی والدہ نے دستخط نہیں کیے۔

اس موقع پر عدالت نے تفتتیشی افسر کو ہدایت کی کہ پاور آف اٹارنی کا معاملہ جلد حل کیا جائے۔

سماعت کے بعد عدالت سے باہر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے رمشا کے وکیل طاہر نوید چوہدری نے استغاثہ پر تاخیری حربے استعمال کرنے کا الزام عائد کیا۔

طاہر نوید کا کہنا تھا کہ میڈیکل رپورٹ میں ثابت ہو چکا ہے کہ رمشا کمسن ہے اور اس کا آئی کیو بہت کم ہے۔

  اس سے قبل ایک میڈیکل رپورٹ میں تصدیق کی گئی تھی کہ رمشا کی عمر چودہ برس کے لگ بھگ ہے جو اسے کمسن ثابت کرتی ہے۔ ساتھ ہی اس کی ذہنی عمر، اُس کی اصل عمر سے کم ہے ۔

جمعہ کو اسلام آباد کی ہی ایک عدالت نے پولیس کی نامکمل تفتیش کے باعث رمشا کے عدالتی ریمانڈ میں مزید چودہ روز کی توسیع کرتے ہوئے اسے اڈیالہ جیل بھجوادیا تھا۔

اس حصے سے مزید

دو نئے پولیو کیسز کی تصدیق

ایک کیس کا تعلق خیبر پختونخوا جبکہ دوسرے کا تعلق فاٹا سے ہے، نیشنل انسٹیٹیوٹ آف ہیلتھ۔

تحریک انصاف کا لندن ملاقات کا اقرار، حکومت نے وضاحت مانگ لی

شاہ محمودقریشی نےکہاہےکہ عمران خان اورطاہرالقادری میں معاہدہ نہیں ہواجبکہ سعدرفیق کےمطابق ملاقات پوشیدہ کیوں رکھی گئی؟

ناقص انتخابی سیاہی کے استعمال پر اداروں کے ایک دوسرے پر الزامات

ای سی پی نے پی سی ایس آئی آر کی جانب سے فراہم کردہ سیاہی کے معیار کو تنقید کا نشانہ بنایا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

اب عمران خان کیا کریں گے؟

عمران خان انتخابی اصلاحات اور تحقیقات کی پیشکش کو تسلیم کر کے جیت سکتے تھے لیکن وہ مزید چیزیں داؤ پر لگائے جارہے ہیں۔

رودرہیم کا سبق

بچوں پر ہونیوالے جنسی تشدد پر ہماری شرمندگی کی سمت غلط ہے۔ شرم کی بات تو یہ ہے کہ ہم اس کو روکنے کی کوشش نہ کریں-

بلاگ

ڈرامہ ریویو: چپ رہو - حساس ترین موضوع پر بہترین پیشکش

زیادتی جیسے واقعات ہر وقت خبروں میں رہتے ہیں اس حوالے سے یہ ڈرامہ شعور اجاگر کرنے میں اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

میں باغی ہوں

اس ملک میں کہیں قانون کی حکمرانی نہیں، ہر جگہ لوٹ مار مچی ہے- کسی کو قانون کا پاس نہیں- تبدیلی آئی تو سب کا احتساب ہوگا-

دھرنے، عوام اور امید کی ہار

یہ میچ بھلے ہی جتنا بھی عرصہ جاری رہے، پر اس میں کھیلنے والے اور دیکھنے والے سب ہی ہارنے والے ہیں۔

مووی ریویو: دختر -- دلوں کو چُھو لینے والی کہانی

اپنی تمام تر خوبیوں اور کچھ خامیوں کے ساتھ اس فلم کو پاکستانی نکتہ نگاہ سے پیش کیا گیا ہے۔