23 اپريل, 2014 | 22 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

بلدیاتی آرڈیننس سپریم کورٹ میں چیلنج

کراچی: سندھ کے وزیر اعلی قائم علی شاہ اور گورنر ڈاکٹر عشرت العباد ۔— پی پی آئی

اسلام آباد: سندھ میں جمعے کی رات کو جاری ہونے والے نئے بلدیاتی نظام کو سپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا گیا ہے۔

عدالت عظمی کی کراچی رجسٹری میں کراچی الائنس کی جانب سے دائر کی گئی درخواست میں گورنر سندھ ، وزیر اعلیٰ سندھ ، چیف سیکریٹری ، سیکریٹری قانون اور سیکریٹری بلدیات کو فریق بنایا گیا ہے۔

درخواست گذار نے موٴقف اختیار کیا ہے کہ آرڈیننس کا اجراء کرکے آئین کے آرٹیکل چار، پانچ، آٹھ، پچیس، بتیس اور ایک سو چالیس کے خلاف ورزی کی گئی ہے۔

سندھ پیپلز لوکل گورنمنٹ آرڈیننس دو ہزار بارہ کے اجراء پر صوبائی حکومت  کو مشکلات کا سامنا ہے ۔

حکمراں اتحاد میں شامل عوامی نیشل پارٹی اور مسلم لیگ فنکشنل صوبائی حکومت سے علیحدگی  کا اعلان کر چکی ہیں۔

دونوں جماعتوں کا کہنا ہے کہ آرڈیننس کے ذریعے سندھ کو تقسیم کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ اس آرڈیننس کے ذریعے حکمراں جماعت پاکستان پیپلز پارٹی نے دیہی سندھ کی قیمت پر متحدہ قومی موومنٹ کو خوش کرنے کی کوشش کی ہے۔

دوسری جانب صوبے کی قوم پرست جماعتوں نے تیرہ ستمبر کو ہڑتال اور وزیر اعلیٰ ہاؤس کے گھیراؤ کا اعلان کر رکھا ہے ۔

اس حصے سے مزید

ایم کیو ایم سندھ حکومت میں شامل

رؤف صدیقی کو وزیرِ صنعت اور ڈاکٹر صغیر کو وزارتِ صحت کا قلمدان سونپا گیا ہے۔

وزیرِ اعظم نے گدّو پاورپلانٹ کے مزید یونٹس کا افتتاح کردیا

نواز شریف نے کہا کہ بجلی کے نئے منصوبوں سے ملک کو اندھیرے سے نکالنے میں مدد ملے گی۔

کراچی پُرتشدد واقعات میں پانچ افراد ہلاک

اسی دوران شہر میں رینجرز اور پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے کم از کم بارہ مشتبہ افراد کو حراست میں لے لیا۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

!مار ڈالو، کاٹ ڈالو

مجھے احساس ہوا کہ مجھے اس پر شدید غصہ آ رہا ہے اور میں اسے سچ بولنے پر چیخ چیخ کر ڈانٹنا چاہتا ہوں-

خطبہء وزیرستان

کس سازش کے تحت 'آپکو' بدنام کرنے کے لئے دھماکے کیے جاتے ہیں؟ کس صوبے کے مظلوم عوام آپکے بھائی ہیں؟

مووی ریویو: ٹو اسٹیٹس

عالیہ بھٹ کی بے ساختہ اداکاری نے اپنے اب تک بے شمار مداح پیدا کرلئے ہیں حالانکہ یہ ان کی تیسری فلم ہے۔

بیچارے مولانا حالی اور صحافت

'صحافت' لفظ کی طاقت کا بے جا استعمال نہیں بلکہ محرومیت کے شکار لوگوں کو طاقت بخشنا ہے