01 اکتوبر, 2014 | 5 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

کراچی میں دو دھماکوں سے سات افراد ہلاک

کراچی: ہلاک ہونے والوں کی لاشیں ایک ہسپتال میں لائی جا رہی ہیں- پی پی آئی فوٹو

کراچی: کراچی کے ایک بازار کے قریب بوہرا برادری کے ایک کمپاؤنڈ میں منگل کی شام دو بم دھماکوں میں کم از کم سات افراد ہلاک جبکہ بائیس افراد زخمی ہوئے ہیں۔

نارتھ ناظم آباد کے قریب ہی واقع حیدری مارکیٹ میں دھماکوں میں زیادہ تر ہلاک و زخمیوں کا تعلق داؤدی بوہرا برادری سے ہے۔

ذرائع کے مطابق، یہ دھماکے بوہرا برادری کے روحانی رہنما سیدی موفدل بھائی صاحب کے گزشتہ روز کے دورے کے بعد ہوئے۔

عباسی شہید ہسپتال کے ڈاکٹر نے تصدیق کی ہے ہلاک ہونے والوں میں سے چھ افراد داؤدی بوہرا برادری سے جبکہ ایک شخص ایک قلفی فروش تھا جس کا تعلق رحیم یار خان سے بتایا جاتا ہے۔

کراچی کے اعلی پولیس افسرنعمان صدیقی کا کہنا ہے کہ پہلا دھماکہ موٹر سائیکل میں نصب مواد پھٹنے سے ہوا جبکہ دوسرا دھماکہ درخت کے نیچے کچرے کے ڈھیر میں ہوا۔

بم ڈسپوزل یونٹ کے ایک اہلکار نے کہا کہ موٹر سائیکل پر تین عشاریہ پانچ  کلو گرام دھماکہ خیز مواد نصب تھا جسے ریمورٹ کنٹرول سے اڑایا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ دوسرا دھماکہ ایمپرووائز دھماکہ خیز آلے سے ہوا جس میں پانچ سو گرام دھماکہ خیز مواد موجود تھا۔

رضویہ علاقے کے ایک پولیس اہلکار کا کہنا تھا کہ یہ موٹر سائیکل تین ستمبر کو چھینی گئی تھی۔

دھماکے کے بعد نارتھ ناظم آباد اور حیدری میں تمام مارکٹین بند کردیں گئیں۔

اس حصے سے مزید

کراچی: ایک گھنٹے میں پولیس پر دو حملے، دو اہلکار زخمی

پہلا واقعہ حسن اسکوائر کے قریب پیش آیا جہاں ایک پولیس موبائل کو موٹر سائیکل سوار حملہ آوروں نے دستی بم سے نشانہ بنایا۔

ممتاز بھٹو بیٹے سمیت مسلم لیگ ن سے بے دخل

سندھ نیشنل فرنٹ کے چیئرمین ممتاز بھٹو نے دعویٰ کیا ہے کہ مسلم لیگ ن نے اُنہیں بیٹے سمیت پارٹی سے نکال دیا ہے

'پاکستان میں حقیقی جدوجہد غریب اور اشرافیہ کے درمیان ہے'

آغا خان یونیورسٹی کے فکری مباحثے میں ماہرین نے سوال کیا کہ کیا ہمیں جمہوری فلاحی ریاست بننا چاہیے یا سیکورٹی اسٹیٹ؟


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (1)

Syed
19 ستمبر, 2012 09:57
طالبان جیسے “شجرہ خبیثہ” کو خلق کرنے والی فورسز نے طالبان کے اجزائے ترکیبی میں اہم جزو “شیعہ دشمنی” رکھا ہے، گڈ طالبان، بیڈ طالبان، اینٹی پاکستان، پرو پاکستان۔۔۔ طالبان سب کے سب شیعہ دشمنی کے ایجنڈے پر اکٹھے نظر آتے ہیں۔ طالبان نوازی کی پالیسی کا سب سے زیادہ تاوان شیعہ قوم نے ادا کیا ہے، آخر کب تک اِس مبینہ “اِسٹریٹیجک ایسیٹس” کے نام پر ملک میں فرقہ واریت کا بازار گرم رکھا جائے گا۔۔۔؟ اِن مبینہ “اِسٹریٹیجک ایسیٹس” کی وجہ سے وہ کونسی آفت ہے جو پاکستان پر نہیں ٹوٹی، پاکستانی عوام آخر کب تک اِن غلط پالیسیوں کا خراج دیتی رہے گی۔۔۔ آخر کب تک؟
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماؤں اور بچوں کے قاتل ہم

پاکستان سے کم فی کس آمدنی رکھنے والے ممالک پیدائش کے دوران ماؤں اور بچوں کی اموات پر قابو پا چکے ہیں۔

تبدیلی کا پیش خیمہ

اکثر ایسے بڑے واقعات پیش آتے ہیں جو تبدیلی کے عمل کو تیز کردیتے ہیں، مگر ایسے حالات کسی فرد کے پیدا کردہ نہیں ہوتے۔

بلاگ

!گو نواز گو

اس ملک میں پڑھے لکھے لوگوں کی قدر ہی نہیں۔ جب تک پڑھے لکھوں کو وی آئی پی پروٹوکول نہیں دیا جاتا یہ ملک ترقی نہیں کرسکتا

قدرتی آفات اور پاکستان

قدرتی آفات سے پہلے انتظامات پر ایک ڈالر جبکہ بعد میں سات ڈالر خرچ ہوتے ہیں، اس کے باوجود ہم پہلے سے انتظامات نہیں کرتے۔

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟