01 ستمبر, 2014 | 5 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

عوام عدلیہ کو اپنا نجات دہندہ سمجھتے ہیں، چیف جسٹس

چیف جسٹس آف پاکستان افتخار محمد چوہدری۔ فائل فوٹو

کوئٹہ: چیف جسٹس پاکستان افتخار محمد چوہدری نے کہا ہے کہ عوام عدلیہ کو اپنا نجات دہندہ سمجھتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ انصاف کی فراہمی یقینی بنانا سب کی ذمہ داری ہے۔

چیف جسٹس افتخار نے کہا ہے کہ جوڈیشل پالیسی کے ثمرات عوام تک پہنچنا شروع ہوگئے۔

کوئٹہ میں نیشنل جوڈیشل پالیسی ساز کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک میں میرٹ پر فیصلے ہونے چاہیے۔

ان کا کہنا تھا کہ عوامی مسائل کا حل قانون کی بالادستی ہے اور جہاں انصاف کا بول بالا ہو تو معیشت بھی مضبوط ہوتی ہے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ کوشش ہے کہ انصاف لوگوں کو ان کے گھروں تک پہنچایا جائے۔

علاوہ ازیں انہوں نے بتا یا کہ ماتحت عدلیہ میں مقدمات کے التوا کم ہوا ہے۔

اجلاس میں چاروں صوبوں اور اسلام آباد کے ہائی کورٹس کے چیف جسٹس اور وفاقی شرعی عدالت کے چیف جسٹس شریک تھے۔

اس حصے سے مزید

بلوچستان میں بارہ مشتبہ عسکریت پسند کی ہلاکت کا دعویٰ

گومازئی میں موجود عسکریت پسندوں کے خلاف آپریشن شروع کیا تھا جس کے نتیجے میں بارہ مشتبہ شرپسند ہلاک ہوگئے۔

بلوچستان: مختلف علاقوں میں فائرنگ، چار افراد ہلاک

کوہلو، ڈیرہ مراد جمالی اور قلعہ عبداللہ میں نامعلوم مسلح افراد کی ٹارگٹ کلنگ سے دو افراد زخمی بھی ہوئے۔

بلوچستان: ذکری فرقے کے چھ افراد سمیت نو ہلاک

حکام کے مطابق مسلح افراد نے ذکری فرقے سے تعلق والے افراد پر اس وقت فائرنگ کردی جب وہ ایک عبادت گاہ میں موجود تھے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مودی اور مسئلہ کشمیر

کیا پاکستان مسئلہ کشمیر کو ایسے ہی رہنے دینا چاہتا ہے، تاکہ کشمیر سے زیادہ اہم افغانستان کے مسئلے پر توجہ دے سکے؟

اسلام آباد کا تماشا

عمران خان کو یہ تسلیم کرنا چاہیے کہ جوڈیشل کمیشن ایک کمزور وزیر اعظم کے اثر و رسوخ سے آزاد ہو کر تحقیقات کر سکے گا.

بلاگ

نوازشریف: قوت فیصلہ سے محروم

نواز شریف اپنے بادشاہی رویے کی وجہ سے پھنس چکے ہیں، جو فیصلے انہیں چھ ماہ پہلے کرنے چاہیے تھے وہ آج کر رہے ہیں۔

حالیہ بحران پر کچھ سوالات

مستقبل میں کیا ہو گا، بحران کا کیا حل نکلے گا، ان سوالات کے جوابات موجود نہیں ہیں، پر اس حوالے سے کئی سوالات موجود ہیں۔

پکوانی کہانی- سندھی بریانی

ہر قسم کی بریانیوں میں سے یہ بریانی منفرد حیثیت رکھتی ہے جو سندھی طریقے سے بہت زیادہ مصالحوں کے ساتھ تیار ہوتی ہے۔

‫ڈرامہ ریویو: وہ۔۔۔ دوبارہ (خوف و دہشت کا احساس)

انسان چاہے بد روحوں سے جتنا بھی ڈرے مگر ان پر بنی فلموں یا ڈراموں کو دیکھنے کا شوق پھر بھی اس کا پیچھا نہیں چھوڑتا۔