22 اگست, 2014 | 25 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

کوئٹہ دھماکہ:ایک ہلاک، چودہ زخمی

کوئٹہ میں ڈبل روڈ کے پاس دھماکے کے بعد جائے وقوعہ کا ایک منظر۔ رائٹرزتصویر

کوئٹہ : کوئٹہ کی ایک مصروف مارکیٹ میں بم دھماکے سے ایک ہلاک اور چودہ افراد زخمی ہوگئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کوئٹہ کو سبی اور کراچی سے ملانے والے ڈبل روڈ پر یہ دھماکہ ہوا جس کی آواز دور تک سنی گئ۔

اس روڈ پر مشہور بڑیچ مارکیٹ کے پاس یہ دھماکہ ہوا جس میں چار پولیس اہلکار سمیت پندرہ افراد زخمی ہوئے۔

بعد ازاں دھماکے میں زخمی ایک بچہ ہسپتال میں دم توڑ گیا۔

زخمیوں کو فوری طور پر سول ہسپتال کوئٹہ منتقل کیا گیا جن میں سے کئی زخمیوں کی حالت اب بھی تشویشناک بتائی جاتی ہے۔ دھماکے سے جہاں ایک رکشہ مکمل طور پر تباہ ہوا وہیں اطراف کی دکانوں کو بھی شدید نقصان پہنچا۔

ابتدائی تفتیش کے مطابق دھماکہ ریموٹ کنٹرول سے کیا گیا اور دھماکہ خیز مواد ایک موٹر سائیکل پر نصب کیا گیا تھا۔

اس حصے سے مزید

کوئٹہ: ایف سی کی کارروائی، بھاری تعداد میں اسلحہ برآمد

ملزمان کے قبضے سے اینٹی ٹینک مائنز، ایم ایم میزائل، مارٹر رائنڈز، ہینڈ گرنیڈز اور ڈیٹو نیٹرز برآمد ہوئے ہیں۔

خضدار میں اجتماعی قبریں، فورسز بری الذمہ قرار

عدالتی کمیشن نے اس کیس میں مسلح فورسز اور انٹیلی جنس ایجنسیوں کے ملوث ہونے کے امکان کو مسترد کردیا ہے۔

خضدار: اجتماعی قبروں کے معاملے میں حکومت ملوث نہیں

ٹریبیونل کی رپورٹ میں کہا گیا کہ ناکافی شواہد کی وجہ سے اس معاملے میں کچھ زیادہ پیش رفت نہیں ہوسکی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مضبوط ادارے

ریاستی اداروں پر تمام جماعتوں کی جانب سے حملہ تب کیا گیا جب وہ ابتدائی طور پر ہی سہی پر قابلیت کا مظاہرہ کرنے لگے تھے۔

آئینی نظام کو لاحق خطرات

پی ٹی آئی کی سیاست کے ساتھ مسئلہ یہ ہے کہ یہ کسی طرح موجودہ آئینی صورت حال میں ممکن سیاسی حل کیلئے تیار نہیں ہے-

بلاگ

عمران خان کے نام کھلا خط

گزشتہ ایک ہفتے کے واقعات پی ٹی آئی ورکرز کی تمام امیدوں اور توقعات کو بچکانہ، سادہ لوح اور غلط ثابت کر رہے ہیں۔

جعلی انقلاب اور جعلی فوٹیجز

تحریک انصاف اور عوامی تحریک کی غیر آئینی حرکتوں کی وجہ سے اگر فوج آگئی تو چینلز ایسی نشریات کرنا بھول جائیں گے۔

!جس کی لاٹھی اُس کا گلّو

ہر دکاندار اور ریڑھی والے سے پِٹنا کوئی آسان عمل نہیں ہوگا شاید یہی وجہ ہے کہ سول نافرمانی کوئی آسان کام نہیں۔

ہمارے کپتانوں کے ساتھ مسئلہ کیا ہے؟

اس بات کا پتہ لگانا مشکل ہے کہ مصباح الحق اور عمران خان میں سے زیادہ کون بچوں کی طرح اپنی غلطی ماننے سے انکاری ہے۔