18 ستمبر, 2014 | 22 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

ملالئے کے نام ایک خط

اے ایف پی فوٹو .--

،عزیزہ ملالہ

آج ہمارے مجاہدین بھائی وزیرستان کے پہاڑوں میں فتح کا ایک اور جشن منا رہے ہیں۔ ہر طرف فائرنگ کا اتنا شور ہے کہ ایک دوسرے کی بات تک سنائی نہیں دیتی۔ اسی لیے میں نے تمہیں خط لکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اگرچہ تم فی الحال یہ خط نہیں پڑھ سکتیں اور یہ جشن اسی خوشی میں منایا جا رہا ہے تاہم میں چاہتا ہوں کہ خط صرف اس صورت میں تمہیں پڑھ کر سنایا جاےٴ اگر جاگنے کے بعد تمہارا حافظہ محفوظ ہو۔ گو اس سے بڑھ کر میرے لیے تکلیف دہ بات کوئی اور نہیں ہو سکتی۔

آج ہمارے یہ بہادر بھائی بہت خوش ہیں کہ افغانستان میں روس کی شکست کی بعد یہ ان کی سب سے بڑی فتح ہے۔ انہوں نے مجھے بتایا ہے کہ تمھارے پڑھنے اور لکھنے سے اسلام کو ایک عظیم خطرہ لاحق ہے اور تم سیکیولر خیالات کے فروغ کے لیے کام کر رہی تھیں۔

مجھے نہیں معلوم کہ تمہارے سکول میں پڑھائی جانے والی کتابوں میں سیکیولر کا ترجمہ ابھی تک لادینیت ہی کیا جاتا ہے یا نہیں لیکن مجھے اتفاق ہے کہ تمہارا پڑھنا اور لکھنا ہی لادینیت ہے۔

ہمارے یہ بھائی مختصر بات کرتے ہیں اور عموما ہر بات کی وضاحت نہیں کرتے کہ شاہینوں کا کام ہی پلٹنا اور جھپٹنا ہے۔ گفتگو بےوقوف کی میراث ہے، مردِ مومن کی نہیں۔ اسی لیے خوشحال خان، رحمان بابا اور غنی خان کے بعد ہم نے یہ کام ترک کردیا ہے یا ان چند دیوانوں کے لیے چھوڑ دیا ہے جو کہیں دور کسی کیمپ میں پناہ گزیں ہیں۔

میرے علم میں یہ بھی آیا ہے کہ تم امریکا کے لئے کام کرتی تھیں اور اوباما کو پسند کرتی تھیں۔ بیٹی اس میں قصور ہمارا بھی ہے۔ ہم تمہیں بتانا بھول گیے کہ امریکیوں سے نفرت کرنا تمہارا فرض ہے خاص طور پر اوباما سے۔

تمہیں سمجھنا چاہیے کہ بھکاری کا بھیک دینے والے سے نفرت کرنا ایک سنہری اصول ہے جس کی بنیاد پر ایک نئی اسلامی مملکت وجود میں لانے کی یہ تاریخی جدوجہد جاری ہے۔ مجھے یقین ہے کہ اس حسین خواب کی تکمیل پر تمہیں آیندہ کوئی اعتراض نہیں ہوگا۔

امید ہے تم اس گہری نیند سے ضرور جاگو گی اور ہمارے شاہین بھائیوں نے وعدہ کیا ہے کہ وہ ایک بار پھر تمہیں ملنے آئیں گے۔ ہر سچے مسلمان کی طرح یہ غازی اپنے وعدے کے پکے ہیں۔ میری دعا ہے کہ تم ان کے آنے تک ایمان کی طے کردہ دولت سے سرفراز اور تعلیم و خواندگی کی لعنت سے محفوظ ہو جاؤ تاکہ ہمارے یہ بھائی اس رحم دلی کا مظاہرہ کر سکیں جس کی ہدایت انہیں عورتوں اور بچوں کے ضمن میں چودہ سو برس قبل کی گئی تھی۔ میں یہ خط انہی کے حوالے کر رہا ہوں کیونکہ اس صورت میں یہی تمہیں یہ خط پڑھ کر سنا سکیں گے۔ آخر تعلیم ان ہی کا تو حق ہے۔

خوش آیند بات یہ ہے کہ اب تم اور ہماری دوسری بیٹیاں گھر کی چار دیواری میں محفوظ ہو جائیں گی اور ہمارے بہادر بھائی ان کی حفاظت پر مامور۔ ہمیں شادی کے ہندوانہ رسم و رواج سے بھی نجات ملے گی اور بلوغت کی اسلامی طور پر طے شدہ عمر میں یہ بہادر مرد کسی بھی مومنہ لڑکی سے عقدِ ثانی کی لیے موجود ہوں گے۔

اس سے بڑھ کر تمہیں کیا چاہیے؟ تمہیں کیوں اصرار ہے کہ تم تعلیم حاصل کرو؟ آخر تم اور اس ملک کی وہ بیٹیاں جو تھوڑی بہت تعلیم حاصل کر چکی ہیں، ہماری فلموں کے کرداروں کی طرح اپنا حافظہ کھو کر زندہ کیوں نہیں رہ سکتیں؟ اس سے بڑا جہاد کیا ہوگا کہ جو فلموں میں ہوتا ہے وہ ہماری زندگی میں ہو اور ہم فلموں سے بھی ہمیشہ کے لیے نجات حاصل کر لیں؟

اگر تم پھر بھی اپنی ضد پر قائم رہیں تو میرے لیے تمہیں بچانا بہت مشکل ہوجاۓ گا۔ حالات اگر اچھے ہوتے تو میں تمہیں چین بھیج دیتا کہ علم حاصل کرنے کے لیے اسلام میں مناسب ترین جگہ وہی قرار دی گئی تھی مگر ہمارے ان شاہینوں کی للکار نے وہاں بھی ایسی ہلچل مچائی ہے کہ کفار سے دوستی کا تمام پول کھل گیا ہے۔ اب وہ بزدل چینی نہ صرف ہمارے بھائیوں بلکہ بیٹیوں سے بھی ڈرنے لگے ہیں۔

کتنی خوشی کی بات ہے کہ علم کا یہ جہنمی دروازہ بھی تم پر بند ہوا۔ اب مجھے ایک ہی امید ہے کہ تم جب جاگو تو یہ خط نہ پڑھ سکو۔ اسی میں سب کی بھلائی ہے۔ ہمارے شاہین بھائیوں کی، تمہاری اور مجھ جیسے بیٹیوں کے باپ کی بھی۔

خدا تمہیں علم و حافظے سے محفوظ اور نیک اعمال کی خوشیوں سے مالا مال رکھے۔


80x80-sheikh-peer-karancheewallaشیخ پیر کا کبھی کویی مرید بننے نہیں آیا ورنہ اسے معلوم ہوجاتا کہ حضرت مفرور ہیں اور  کرانچی والا کا لقب دھوکہ دینے کے لیے استعمال کرتے ہیں۔


ڈان میڈیا گروپ کا لکھاری اور نیچے دئے گئے کمنٹس سے متّفق ہونا ضروری نہیں۔

اس حصے سے مزید

مقامی حکومت کےبغیرجمہوریت آمریت سےبدتر، الطاف حسین

اپنی61ویں سالگرہ کی تقریب سےویڈیولنک سےخطاب میں ان کاکہناتھاکہ دنیامیں کوئی پارلیمنٹ سڑکوں اورپلوں کی تعمیر نہیں کرتی۔

پنجاب میں سیلاب سے دو ہزار اسکول تباہ

بارشوں اور سیلاب سے سب سے زیادہ متاثرہ صوبہ پنجاب میں تقریباً 2 ہزار اسکول تباہ، ہلاکتوں کی تعداد 317 ہو گئی۔

دھرنوں کے شرکا کے تحفظ کے لیے مجسٹریٹ نظام بحال

جسٹس اطہر من اللہ نے یہ حکم پی ٹی آئی سیکرٹری جنرل کی جانب سے مظاہرین کے پرامن رہنے کی یقین دہانی کے بعد جاری کیا۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (13)

سلیم احسن
10 اکتوبر, 2012 15:00
آپ جو بھی کہیں طالبان سی بات تو کرنی ہی پڑے گی ورنہ آپ امن کو بھول جاییں.
نادیہ خانم
10 اکتوبر, 2012 15:03
آپ بات کرتے رہیے، وہ مارتے رہیں گے. دس سال تو یہی ہوا ہے. خدا آپ کو ایمان کی طاقت کے ساتھ ساتھ عقل بھی عطا فرماے.
atif rehman
10 اکتوبر, 2012 19:23
as salam o alekam islam main uorat kay parney lakhne par pabandi hai mojay tu pata hi ne tha or bay gonnah qattal karne ko jahhad kaha jata hai yah hummara deen hai ..............? Allah kay banddo islam ko badnam mat karo is ko parro gay tu samaj aaye gi kash es web per main koch zada sakhat alfaz istamaal kar sakta tu ap samaj jatay kay......... baygonah qattal or jehhad main faraq keya hai or islam humain kis cheez ki talqeen karta hai......... ...........per khatt lakhne walay bhai ap ni.........Allah ap say insaaf karay Ameen Malala Allah ap ko sayhat kamela day Ameen Allah hafiz
ALI
10 اکتوبر, 2012 22:22
President OBHAMA ordered CIA to Kill the Malala Yousafza in order to reduce the pressure due to Imran Khan peace March against drone. As Obhama want to show there is Talban so my Drone policy is not wrong. \ Obhama Order to kill her only to show there is so much Talban in Pakistan, Obhama want to reduce presure after IMran khan peace March.Why Talban not killed her in last three years as she was there, Why they select to kill this time????
Yawar
11 اکتوبر, 2012 02:14
Very effective. You sir have exposed the true face of the Taliban philosophy that has held Pakistan hostage for over two decades. Inshallah, the demise of this philosophy, which unfortunately was also embraced by a very loud and at times violent non-Taliban minority in Pakistan, is near, thanks to the Taliban's cowardly act. Inshallah, the silent majority of Pakistan will rise and unite to confront the menace of extremism that the Taliban so proudly professes.
joher ali
11 اکتوبر, 2012 02:59
میری دعا ہے کہ اللہ ہر باپ کو آپ کی طرح ایک بیٹی عطا کر دے اور جلد از جلد صحت یاب کردے (امین)
MANIF
11 اکتوبر, 2012 04:42
IF THE PEOPLE WHO WANTED TO KILL MY ANGEL DAUGHTER MALALA(A GREAT MUJAHID) ARE TALIBAAN AND IF THESE KILLERS ARE CALLING THEMSELVES AS MUJAHID,,,THEN IN MY OPINION ANY ONE WHO WANTS TO DESTROY THESE TYPE OF TALIBAAN OR MUJAHID ,,,SHOULD BE CONSIDERED MUCH BETTER MUJAHID OF HIGHER RANK THAN ANY SUCH TALIBAAN MUJAHID WHO WANTS TO SHOOT THE INNOCENT ANGELS LIKE MALALA,,,,THE SHOOTERS OF MALALA WILL GO TO HELL NAMELESS,,,,AND MALALA,,PRINCESS WILL REMAIN ALIVE AS THE QUEEN OF HEARTS IN EVERY PART OF THE WORLD
shamim zehra
11 اکتوبر, 2012 06:02
ILM HASIL KRNA HUR MUSULMAN PA FARZ HA EVERY muslim means all no discrimination regarding male and female they really dont know islamic ideology may ALLAH Protect to us from those who really idiot like that
محمد عارف
12 اکتوبر, 2012 01:41
خدا وند عالم امام زمانہ علیہ السلام کا ظہور جلد از جلد فرمائے ۔ آمین ۔ پاکستان کے حکومتی کارندے تو بمہ کیانی ڈالر بنانے میں مصروف ہیں ۔ اب تو میرے امام علیہ السلام ہی ان ظالوں کو سنبھال سکتے ہیں ۔ الله اس بچی کو صحت کاملہ عطا فرمائے ۔ آمین ۔
Yawar
12 اکتوبر, 2012 02:30
Thats right. Why would the Taliban, a peace loving group of people, attack an innocent 14-year old girl and then boast about it? It just does not make sense. Which leads me to beleive that since a Taliban could not have shot her, it must have been Raymond Davis, and Ihsanullah, the Taliban spokesman, is really an American actor from Hollywood.
محمد عارف
12 اکتوبر, 2012 08:53
وہ ایک پاگل ہے ۔ ایک لڑکی کو گولی مار کر بہادر بنا پھرتا ہے ۔ جائے جا کر کسی امریکی کومار کر دیکھے ۔ کسی نہتے اور وہ بھی ایک لڑکی پر اور وہ دور سے فائر لعنت ہو اس امریکہ کے غلام پر اوئے بے غیرت تم خدا کا سامنا کس طرح کرو گے ۔
moiz iqbal
12 اکتوبر, 2012 11:28
ya wakt ha musalmano ka liya ka apni andar mujood kali bharo ko pehchanay ka,haddits nabwi(s.w.a.w) ha; "yahoodiyo nisrani kabhi tumharay dost nahi ho saktay". ya sab shataniyat israel ki olad amreeka ki ha warna malala 3 saal bad is halat ma na hoti.
Jamal
15 اکتوبر, 2012 11:05
Great writing, extremely sarcastic and i agree with 99% of the part of it, however there is a suggestion i have if you can try and use some better words then Ghazi and Mujahid and Use a common word Muslims.... it will humiliate the whole muslim Ummah who unfortunately have to respect the genuine ghazi and mujaheddin. Like Ilam deen shaheed, and so many Sahabah and Prophet as well who have done genuine Jihad and called them selves as Ghazis and Mujahideens ... Or if thats too harsh then Use the word terrorist which had nothing to do with Islam and not let a week end in hands of Those who would eventually call our Prophet of Mercy a Terrorist. Another suggestion ... Think allot before you put any thing down in writing or say something as one written, said and publicized... it becomes part of the history and history can be altered ... need proof ... You and I are living examples .... Lastly Malala is a Mujahidah sister of mine herself and I respect her for being a Mujahidah and I pray that Allah bless her with good health so she can get up again and make every one realize what real Jihad is so the people to come wouldn't use the word Mujahid and Ghazi for militants & terrorists so a common Muslim wouldent feel humiliated of his faith.. Aameen
مقبول ترین
سروے
بلاگ

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔

کراچی میں فرقہ وارانہ دہشتگردی

کراچی ایک مرتبہ پھر فرقہ وارانہ دہشت گردی کی زد میں ہے اور روزانہ کوئی نہ کوئی بے گناہ سنی یا شیعہ اپنی جان گنوا رہا ہے۔

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔

کریچر - تھری ڈی: گوڈزیلا یا ڈیوی جونز کا کزن؟

یہ کہنا غلط نہ ہوگا بپاشا ہارر تھرلرز تک محدود ہوگئی ہیں جبکہ عمران عبّاس نے انکے گرد چکر کاٹنے کے سوا کچھ نہیں کیا۔