30 اگست, 2014 | 3 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاکستان آل اسٹارالیون کی انٹرنیشنل ورلڈ الیون کیخلاف کامیابی

ہفتہ کے روز کرچی کے نیشنل اسٹیدیم میں کھیلے جانے والے میچ کا ایک منظر۔ – اے ایف پی فوٹو

کراچی: ساڑھے تین سال کے صبر آزما انتظار کے بعد بالآخر پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کی واپسی ہو گئی۔ پاکستان آل اسٹار الیون نے انٹرنیشنل ورلڈ الیون کو پہلے ٹی ٹوئنٹی میچ میں چوراسی رنز سے ہرا دیا۔

ہفتہ کے روز کرچی کے نیشنل اسٹیدیم میں کھیلے جانے والے میچ میں پاکستان آل اسٹار الیون کے بیٹسمینوں نے چوکوں اور چھکوں کی بارش کردی۔

اوپنر شاہ زیب حسن اورعمران نذیر اور مڈل آرڈر بیٹسمین عمر اکمل نے انٹرنیشنل الیون کے بالرز کی گیندوں کا جارحانہ انداز میں سامنا کیا اور مقررہ اوورز میں سات وکٹوں کے نقصان پر دو سو بائیس رنز اسکور کئے۔

شائقین کی ایک بڑی تعداد میچ دیکھنے کیلئے اسٹیڈیم میں موجود تھی جو پاکستان کی بیٹنگ کے دوران لگنے والے ہر چوکے اور چھکے پر بھرپور داد دیتے نظر آئے۔

پاکستان الیون کی جانب سے عمر اکمل سڑسٹھ رنز کے ساتھ ناقابل شکست رہے۔ جبکہ انٹرنیشنل الیون کے شابالالا بیس رنز کے عوض تین وکٹیں حاصل کرنے میں کامیاب رہے۔

ہدف کے تعاقب میں انٹرنیشنل الیون کا کوئی بھی بیٹسمین پاکستانی بالنگ اٹیک کا جم کر سامنا نہ کرسکا۔ کپتان جے سوریا پہلے ہی اوور آؤٹ ہو گئے جس کے بعد اسٹیون ٹیلر، محمد شہزاد اور رکارڈو پاول بھی جلد ہی اپنی وکٹیں گنوابیٹھے۔ مقرررہ اوورز میں انٹرنیشنل الیون کی ٹیم آٹھ وکٹوں پرصرف ایک سو اڑتیس رنز ہی بنا سکی۔

تابش خان نے اننگز کے ساتویں اوور میں ہیٹ ٹرک کی جب کہ وہاب ریاض دو وکٹیں لینے میں کامیاب رہے۔

اس حصے سے مزید

پاکستان اور سری لنکا کا فیصلہ کن معرکہ ہفتے کو

آف اسپنر سعید اجمل کی دستیابی مصباح الحق اور ٹیم مینجمنٹ کے حوصلہ کو بلند کرے گی۔

سری لنکا کی پاکستان کو 77 رنز سے شکست

311 رنز کے تعاقب میں پاکستانی ٹیم 233 رنز بناکر آؤٹ ہو گئی۔

'صہیب کو اوپر کے نمبر پر بھیجا جائے'

ماضی میں وہ اوپر کے نمبروں پر کھیل چکے ہیں، میرا خیال ہے کہ انہیں چوتھے یا پانچویں نمبر پر بھیجنا چاہیئے، اقبال قاسم۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (1)

Husnain Arif Gailani
21 اکتوبر, 2012 07:05
salam . i like your links but muje ye site aj mili hai. khair thank you very much.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

اسلام آباد کا تماشا

عمران خان کو یہ تسلیم کرنا چاہیے کہ جوڈیشل کمیشن ایک کمزور وزیر اعظم کے اثر و رسوخ سے آزاد ہو کر تحقیقات کر سکے گا.

جمہوریت کے تسلسل کی ضرورت

حکومت نےکس قدر عجلت میں مذاکرات کا فیصلہ کیا، اس سے معاملات کے اوپر جی ایچ کیو کی گرفت کا اچھی طرح اندازہ ہوجاتا ہے۔

بلاگ

اجتماعی سیاسی قبر

فوج کو سیاسی معاملات میں شرکت کی دعوت دینا اس بات کا ثبوت ہے کہ سیاستدان سیاسی معاملات سے نمٹنے کی طاقت نہیں رکھتے۔

مووی ریویو: مردانی - پاورفل کہانی، بہترین پرفارمنس

بولی وڈ اداکار رانی مکھرجی اور طاہر بھاسن دونوں ہی اپنی بولڈ پرفارمنس کے لئے تعریف کے لائق ہیں۔

عظیم مقاصد، پر راستہ؟

اس طوفان کے نتیجے میں ان چاہی افرا تفری پھیل سکتی ہے، اسلیے اچھے مقاصد کے لیے ایسے راستے اختیار نہیں کیے جانے چاہییں۔

انقلاب معافی چاہتا ہے

ڈی چوک وہ سیاسی چراغ ہے جس کو اگر ضدی شہزادے کافی حد تک رگڑ دیں تو کچھ پتا نہیں اس میں سے انقلاب کا جن نکل ہی آئے۔