21 ستمبر, 2014 | 25 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

افغانستان فضل اللہ کو حوالے کرے، پاکستان

وزیرِخارجہ حناربانی کھر۔ —فائل تصویر

اسلام آباد: اطلاعات کے مطابق پاکستان نےافغانستان میں روپوش پاکستان تحریک طالبان سوات کے چیف مولوی فضل اللہ کی حوالگی کا مطالبہ کیا ہے۔

فضل اللہ سوات میں فوجی آپریشن کے بعد افغان  صوبے کنڑ میں روپوش ہو گئے تھے۔

ٹی وی چینلز نے سفارتی ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ پاکستان کی وزیر خارجہ حنا ربانی کھر نے  یہ مطالبہ اتوار کی رات امریکہ کے نمائندہ خصوصی برائے پاکستان اور افغانستان مارک گراسمین کے ساتھ ایک ملاقات میں کیا  تھا۔

کھر نے گرامسین پر زور دیا تھا کہ وہ افغانستان پر مولوی فضل اللہ کو حوالے کرنے کے لیے دباؤ ڈالیں۔

ان کا کہنا تھا کہ فضل اللہ پاکستانی سرحد سے ملحقہ افغان علاقے میں روپوش ہیں اور ان کے ساتھی وقتاً فوقتاً پاکستان کی دیر، چترال اور دوسرے علاقوں میں موجود فوجی چیک پوسٹوں پر حملے کرتے ہیں۔

ٹی وی چینلز کے مطابق وزیر خارجہ نے امریکی  نمائندے کو بتایا کہ فضل اللہ پاکستان میں سرحد پار حملوں میں مُلوث ہیں اور ان پر الزام ہے کہ انہوں نے ملالئے یوسف زئی پر حملے کی منصوبہ بندی کی تھی۔

اس حصے سے مزید

عبداللہ عبداللہ افغان صدارت سے دستبردار

افغان صدارتی امیدواروں میں معاہدہ طے پا گیا، اشرف غنی صدر ہوں گے جبکہ عبداللہ چیف ایگزیکٹو افسر کو نامزد کریں گے۔

بگرام جیل سے 14 پاکستانی رہا

14 پاکستانی قیدیوں کو افغانستان کی بگرام جیل میں امریکی حراست سے رہا کرکے پاکستان منتقل کردیا گیا۔

افغانستان: بغلان میں مسجد کے باہر دھماکا، 6 ہلاک

صوبائی پولیس چیف کے ترجمان کا کہنا ہے کہ دھماکا مسجد کے باہر ہوا تاہم یہ واضح نہیں ہے کہ اس کے پیچھے کون ملوث ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

پاکستان کی "مڈل کلاس" بغاوت

پاکستان کے مڈل کلاس لوگ ہی جمہوریت کے سب سے بڑے مخالف ہیں اور کچھ کیسز میں تو جمہوریت کی مخالفت بغاوت کی حد تک شدید ہے۔

!میرے پیارے اسلام آباد

میں آپ سے معافی چاہتا ہوں کہ میں نے آپ کی جانب دو دھرنے بھیجے ہیں، جنہوں نے آپ کا امن و سکون تباہ کر دیا ہے۔

بلاگ

بلوچ نیشنلزم میں زبان کا کردار

لسانی معاملات پر غیر دانشمندانہ طریقہ سے اصرار مزید ناراضگی اور پیچیدگیوں کا سبب بن سکتا ہے، جو شاید مناسب قدم نہیں۔

خواندگی کا عالمی دن اور پاکستان

تعلیم کو سرمایہ کاروں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے جن کے لیے تعلیم ایک جنس ہے جسے بیچ کر منافع کمایا جاسکتا ہے-

ڈرامہ ریویو: چپ رہو - حساس ترین موضوع پر بہترین پیشکش

زیادتی جیسے واقعات ہر وقت خبروں میں رہتے ہیں اس حوالے سے یہ ڈرامہ شعور اجاگر کرنے میں اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

میں باغی ہوں

اس ملک میں کہیں قانون کی حکمرانی نہیں، ہر جگہ لوٹ مار مچی ہے- کسی کو قانون کا پاس نہیں- تبدیلی آئی تو سب کا احتساب ہوگا-