03 ستمبر, 2014 | 7 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

کراچی: پانچ طالبعلموں سمیت اٹھارہ افراد قتل

کراچی میں بدامنی کے پیش نظر شہر کی اہم شاہراہ پر رینجرز کے اہلکار موجود ہیں۔ فائل فوٹو آن لائن

کراچی: صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی کے مختلف علاقوں میں ٹارگٹ کلنگ کے واقعات میں ایک گھنٹے کے دوران سات افراد جاں بحق ہوگئے جس کے بعد شہر قائد میں آج ہلاک کیے گئے افراد کی تعداد پندرہ ہو گئی ہے۔ شہر کے مختلف علاقوں میں  کشیدگی کے بعد کاروبار بھی بند ہو گئے۔

ڈان نیوز کے مطابق گلشن اقبال بلاک ٹو میں نامعلوم افراد نے چائے کے ہوٹل پر فائرنگ کردی جس سے عبدالخالق،عمران،شمس الرحمان اور عبداللہ سمیت پانچ افراد ہلاک  اور دو زخمی ہوگئے۔ واقعے کے بعد علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا اور پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی۔

حادثہ سنی مکتبہ فکر کے دیوبندی مدرسے کے سامنے پیش آیا جہاں طالبعلم سامنے چائے پینے کیلیے جمع ہوئے تھے، مذکورہ مدرسے میں 18 سے 22 کی عمر کے درمیان طالبعلم زیر تعلیم ہیں۔

ایک سینئر پولیس آفیشل شاہد حیات نے اے ایف پی کو بتایا کہ موٹر سائیکل پر سوار مسلح افراد خصوصاً مذکورہ مدرسے کے طالبعلموں کو نشانہ بنانے کے بعد فرار ہو گئے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ حادثہ جاری فرقہ وارانہ اور سیاسی ٹارگٹ کلنگ کی لہر کا حصہ ہے جس میں رواں سال کم از کم گیارہ سو سے زیادہ افراد مارے جا چکے ہیں۔

ایک اور پولیس آفیشل محمد حفیظ نے اے ایف پی کو بتایا کہ پولیس اس بات کی تحقیقات کر رہی ہے کہ خصوصاً اسی مدرسے کے طالبعلموں کو یوں نشانہ بنایا گیا۔

دوسری جانب نارتھ ناظم آباد میں سیفی کالج کے قریب شرپسندوں نے فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں تین افراد جان سے ہاتھ دھو بیٹھے، ہلاک ہونے والوں کی لاشیں عباسی اسپتال لائی گئیں۔

بعدازاں بفرزون میں کار پر فائرنگ سے توقیق جبکہ کھوکھراپار میں فائرنگ سے سلیم ہلاک ہوگیا، سہراب گوٹھ الآصف اسکوائر کے قریب فائرنگ سے نوجوان چل بسا۔

اس سے قبل کورنگی چھ نمبر پر نامعلوم افراد نے ایک دکان پر فائرنگ کر دی جس سے دو افراد ہلاک ہو گئے۔ قبل ازیں کورنگی کے ہی علاقے جمعہ گوٹھ میں فائرنگ سے قوم پرست جماعت کا کارکن چل بسا۔

دریں اثنا کراچی کے علاقے پاک کالونی میں ریکسر پل کے قریب نامعلوم مسلح افراد کی فائرنگ سے صادق، بابر، منور اور شاہد ہلاک ہو گئے۔

واقعے کے بعد پولیس اور ریسکیو ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچیں اور لاشوں کو سول اسپتال منتقل کیا۔

اس حصے سے مزید

حیدر آباد: عمارت گرنے سے 13 افراد ہلاک، متعدد زخمی

چوڑی پاڑہ میں گرنے والی تین منزلہ عمارت کے ملبے تلے دب کر مرنے والوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔

قحط کا شکار تھر، لوگ غربت کے باعث خودکشی کر رہے ہیں

محض سات مہینوں کے اندر تھرپارکر ضلع میں اکتیس افراد غربت کے باعث موت کو گلے لگا چکے ہیں۔

وزیراعظم، وزیرداخلہ کی نااہلی کے لیے درخواست دائر

سندھ ہائی کورٹ میں دائر درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ نواز شریف کو آرٹیکل باسٹھ اور تریسٹھ کے تحت نااہل قرار دیا جائے


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماڈل ٹاؤن کیس: کچھ حماقتیں

حکمرانوں کے منع کرنے پر پولیس کی جانب سے مقتولین کی ایف آئی آر درج کرنے میں تاخیر کی وجہ سے معاملہ مزید خراب ہوا۔

بیوروکریٹس کی یونین

ذاتی مفادات کے لیے چوری چھپے سیاسی ہونے سے زیادہ بہتر ہے کہ ریاست کے وسیع تر مفاد کے لیے کھلے عام سیاسی ہوا جائے۔

بلاگ

ڈرامہ ریویو: 'لا'...الجھتے رشتوں کی کہانی

ڈرامہ پرفیکٹ نہیں بھی تھا تو بھی یہ ان ڈراموں میں سے ایک ضرور تھا جسے دیکھ کر بیزاری کا احساس نہیں ہوتا۔

مووی ریویو : 'راجہ نٹور لال' سٹیریو ٹائپنگ کا شکار ہوگئی

یہ فلم نہ تو مزاح پر پوری اترتی ہے اور نہ ہی اس میں اتنا تھرلر ہے جو اسے ذہن میں نقش کر دے۔

سستا خون: براۓ انقلاب

"انقلاب" سیاست چمکانے کے لیے ایک خوشنما لفظ بن چکا ہے، اور اسے مزید چمکانے کے لیے کارکنوں کا سستا خون بھی دستیاب ہے۔

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔