21 ستمبر, 2014 | 25 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاکستان کیجانب سے انٹیلجنس سربراہ حملہ کے الزام کی تردید

افغانستان کے صدر حامد کرزئی۔ فائل فوٹو اے پی۔

اسلام آباد: پاکستانی دفتر خارجہ نےافغان صدر حامد کرزئی کیجانب سے انٹیلی جنس چیف اسداللہ خالد پرحملے کی منصوبہ بندی کے الزام کو مسترد کر دیا ہے۔

ہفتہ کے روز دفتر خارجہ ایک ترجمان نے افغان صدر کی جانب سے لگائے گئے الزام پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان کو الزامات کی بجائے اپنی سیکورٹی کوتاہیوں کی تحقیقات کرنی چاہیے۔

اس سے قبل، صدر حامد کرزئی نے الزام لگایا تھا کہ افغان انٹیلی جنس کے سربراہ اسد اللہ خالد پرحملہ کی منصوبہ بندی پاکستان کے شہر کوئٹہ میں کی گئی۔

ایک پریس کانفرنس سے بات چیت میں کرزئی نے پاکستان پر براہ راست الزام لگانے سے گریز کیا تاہم ان کا کہنا تھا کہ وہ اس معاملے پر اسلام آباد سے بات کریں گے۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق حکومت پاکستان اس مجرمانہ حرکت کی تحقیقات پر تعاون کیلیے تیار ہے۔ تاہم اس قسم کی الزام تراشی مناسب نہیں۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ بہتر ہوتا اگر افغان حکومت الزام تراشی سے پہلے  پاکستان سے معلومات کا تبادلہ کرلیتی۔

نیشنل ڈائریکٹوریٹ آف سیکورٹی(این ڈی ایس) کے سربراہ خالد پر جمعرات کو کابل کے  وسطی علاقے تائیمان میں خود کش حملہ کیا گیا تھا۔

افغان طالبان نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کی تھی لیکن کرزئی کا کہنا ہے کہ عسکریت پسند کابل کے وسط میں اس طرح کی کارروائی نہیں کر سکتے۔

اس حصے سے مزید

عبداللہ عبداللہ افغان صدارت سے دستبردار

افغان صدارتی امیدواروں میں معاہدہ طے پا گیا، اشرف غنی صدر ہوں گے جبکہ عبداللہ چیف ایگزیکٹو افسر کو نامزد کریں گے۔

بگرام جیل سے 14 پاکستانی رہا

14 پاکستانی قیدیوں کو افغانستان کی بگرام جیل میں امریکی حراست سے رہا کرکے پاکستان منتقل کردیا گیا۔

افغانستان: بغلان میں مسجد کے باہر دھماکا، 6 ہلاک

صوبائی پولیس چیف کے ترجمان کا کہنا ہے کہ دھماکا مسجد کے باہر ہوا تاہم یہ واضح نہیں ہے کہ اس کے پیچھے کون ملوث ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

پاکستان کی "مڈل کلاس" بغاوت

پاکستان کے مڈل کلاس لوگ ہی جمہوریت کے سب سے بڑے مخالف ہیں اور کچھ کیسز میں تو جمہوریت کی مخالفت بغاوت کی حد تک شدید ہے۔

!میرے پیارے اسلام آباد

میں آپ سے معافی چاہتا ہوں کہ میں نے آپ کی جانب دو دھرنے بھیجے ہیں، جنہوں نے آپ کا امن و سکون تباہ کر دیا ہے۔

بلاگ

بلوچ نیشنلزم میں زبان کا کردار

لسانی معاملات پر غیر دانشمندانہ طریقہ سے اصرار مزید ناراضگی اور پیچیدگیوں کا سبب بن سکتا ہے، جو شاید مناسب قدم نہیں۔

خواندگی کا عالمی دن اور پاکستان

تعلیم کو سرمایہ کاروں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے جن کے لیے تعلیم ایک جنس ہے جسے بیچ کر منافع کمایا جاسکتا ہے-

ڈرامہ ریویو: چپ رہو - حساس ترین موضوع پر بہترین پیشکش

زیادتی جیسے واقعات ہر وقت خبروں میں رہتے ہیں اس حوالے سے یہ ڈرامہ شعور اجاگر کرنے میں اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

میں باغی ہوں

اس ملک میں کہیں قانون کی حکمرانی نہیں، ہر جگہ لوٹ مار مچی ہے- کسی کو قانون کا پاس نہیں- تبدیلی آئی تو سب کا احتساب ہوگا-