02 ستمبر, 2014 | 6 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

'پاکستان 'محفوظ پناہ گاہوں' کے خلاف کارروائی کے لیے تیار'

امریکی وزیرِ دفاع لیون پنیٹا ۔ اے پی تصویر
امریکی وزیرِ دفاع لیون پنیٹا ۔ اے پی تصویر

واشنگٹن: امریکی وزیر دفاع لیون پینیٹا نے کہا ہے کہ پاکستان نے افغان سرحد سے ملحقہ علاقوں میں موجود عسکریت پسندوں کے خلاف کارروائی پر آمادگی ظاہر کی ہے۔

کویت کے دورے کے دوران میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پنیٹا نے کہا کہ پاکستان عسکریت پسندوں کے خلاف کارروائی کی اہلیت رکھتا ہے اور پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل اشفاق پرویز کیانی نے عسکریت پسندوں کے محفوظ ٹھکانوں پر مزید دباؤ بڑھانے پر آمادگی کا اظہار کیا ہے۔

پینیٹا نے اس بات کا بھی اعتراف کیا کہ پاکستان افغان طالبان کے ساتھ پرامن حل کے لیے مذاکرات میں مدد کررہا ہے۔

یہ بیان پینٹاگون کی ایک رپورٹ کے منظر عام پر آنے کے بعد آیا ہے۔

اس رپورٹ میں تاثر دیا گیا تھا کہ پاکستان نے اب بھی دہشت گردوں کو اپنے قبائلی علاقوں میں موجود محفوظ ٹھکانوں سے کارروائیوں کی اجازت دے رکھی ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ یہ رپورٹ پرانی ہے اور اب پاکستان نے اس حوالے سے اپنی کارکردگی کافی بہتر کی ہے۔

پیر کو منظر عام پر آنے والی یہ رپورٹ کانگریس کو تین مہینے قبل بھیجی گئی تھی۔

اس رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ فاٹا میں دہشت گردوں کے محفوظ ٹھکانوں کی وجہ سے امریکہ اور اتحادی افواج افغانستان میں دہشت گردوں کو ' فیصلہ کن شکست' نہیں دے پارہے ہیں۔

پینٹاگون میں حکام نے اس رپورٹ کے حوالے سے میڈیا کے نمائندوں کو بتایا تھا کہ جولائی سے اب تک پاکستان کے ساتھ تعلقات میں بہتری آئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ نیٹو فورس پاکستان کے ساتھ مل کر آپریشن کررہی ہے لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ سب کچھ ٹھیک ہوگیا ہے کیوں کہ پاکستان میں ابھی تک دہشت گردوں کے محفوظ ٹھکانے موجود ہیں۔

اس حصے سے مزید

'خان صاحب نے کہا کہ فوج کے بغیر نہیں چل سکتے'

عمران کو ملک کے آئین اور قانون کی پرواہ نہیں، وہ منصوبہ بندی کے تحت اسلام آباد آئے ہیں، صدر تحریک انصاف جاوید ہاشمی

ہاشمی کے الزامات بے بنیاد ہیں، پی ٹی آئی

تحریک انصاف کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی نے فوج کے ساتھ کوئی رابطہ نہیں کیا ہے اور نہ ہی کوئی خفیہ ایجنڈا ہے

'امریکا تشدد کے ذریعے تبدیلی کا حامی نہیں'

ترجمان امریکی محکمہ خارجہ جین پساکی نے کہا کہ سیاسی نظام میں ماورائے آئین تبدیلی کی مخالفت کرتے ہیں۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

احتیاطی نظربندی کا غلط قانون

فوجی اور سویلین حکومتوں نے باقاعدگی سے احتیاطی نظربندی کو اپنے مخالفین کو خاموش کرنے اوردھمکانے کے لیے استعمال کیا ہے۔

توجہ طلب شعبہ

بجلی کی لائنیں لگانے اور مرمت کرنے کو دنیا کے دس خطرناک ترین پیشوں میں شمار کیا جاتا ہے-

بلاگ

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔

تاریخ کی تکرار

پولیس پر تشدد اور دہشت گردی کا الزام لگانے والے کیا اپنے گھروں پر کسی ایرے غیرے نتھو خیرے کو چڑھائی کی اجازت دیں گے؟

آبی مسائل کا ذمہ دار ہندوستان یا خود پاکستان؟

پاکستان میں پانی اور بجلی کے بحران کی وجہ پچھلے 5 عشروں سے پانی کے وسائل کی خراب مینیجمنٹ ہے۔

نوازشریف: قوت فیصلہ سے محروم

نواز شریف اپنے بادشاہی رویے کی وجہ سے پھنس چکے ہیں، جو فیصلے انہیں چھ ماہ پہلے کرنے چاہیے تھے وہ آج کر رہے ہیں۔