02 اگست, 2014 | 5 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

'پاکستان 'محفوظ پناہ گاہوں' کے خلاف کارروائی کے لیے تیار'

امریکی وزیرِ دفاع لیون پنیٹا ۔ اے پی تصویر
امریکی وزیرِ دفاع لیون پنیٹا ۔ اے پی تصویر

واشنگٹن: امریکی وزیر دفاع لیون پینیٹا نے کہا ہے کہ پاکستان نے افغان سرحد سے ملحقہ علاقوں میں موجود عسکریت پسندوں کے خلاف کارروائی پر آمادگی ظاہر کی ہے۔

کویت کے دورے کے دوران میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پنیٹا نے کہا کہ پاکستان عسکریت پسندوں کے خلاف کارروائی کی اہلیت رکھتا ہے اور پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل اشفاق پرویز کیانی نے عسکریت پسندوں کے محفوظ ٹھکانوں پر مزید دباؤ بڑھانے پر آمادگی کا اظہار کیا ہے۔

پینیٹا نے اس بات کا بھی اعتراف کیا کہ پاکستان افغان طالبان کے ساتھ پرامن حل کے لیے مذاکرات میں مدد کررہا ہے۔

یہ بیان پینٹاگون کی ایک رپورٹ کے منظر عام پر آنے کے بعد آیا ہے۔

اس رپورٹ میں تاثر دیا گیا تھا کہ پاکستان نے اب بھی دہشت گردوں کو اپنے قبائلی علاقوں میں موجود محفوظ ٹھکانوں سے کارروائیوں کی اجازت دے رکھی ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ یہ رپورٹ پرانی ہے اور اب پاکستان نے اس حوالے سے اپنی کارکردگی کافی بہتر کی ہے۔

پیر کو منظر عام پر آنے والی یہ رپورٹ کانگریس کو تین مہینے قبل بھیجی گئی تھی۔

اس رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ فاٹا میں دہشت گردوں کے محفوظ ٹھکانوں کی وجہ سے امریکہ اور اتحادی افواج افغانستان میں دہشت گردوں کو ' فیصلہ کن شکست' نہیں دے پارہے ہیں۔

پینٹاگون میں حکام نے اس رپورٹ کے حوالے سے میڈیا کے نمائندوں کو بتایا تھا کہ جولائی سے اب تک پاکستان کے ساتھ تعلقات میں بہتری آئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ نیٹو فورس پاکستان کے ساتھ مل کر آپریشن کررہی ہے لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ سب کچھ ٹھیک ہوگیا ہے کیوں کہ پاکستان میں ابھی تک دہشت گردوں کے محفوظ ٹھکانے موجود ہیں۔

اس حصے سے مزید

اسلام آباد میں اضافی دستے تعینات نہیں کر رہے، فوج

دستوں کی تعیناتی پندرہ جون کو ہو چکی اور اس حوالے سے نوٹیفیکیشن دیر سے آیا، فوجی ترجمان کا اصرار۔

بلوچستان: مسخ شدہ لاشیں ملنے کی تحیقات شروع

تحقیقات لیفٹیننٹ جنرل جنجوعہ کی جانب سے صوبائی حکومت کو ملنے والے ایک خط کے بعد شروع ہوئیں۔

سیاسی بحران ختم کرنے کیلئے نواز شریف کی مشاورت

وزیر اعظم کو ہر صورت 'ون مین شو' کا تاثر زائل کرنے، پارٹی میں اندرونی اختلافات ختم کرانے کے مشورے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ہمارا پارٹ ٹائم لیڈر

اتنی ناکارہ لیڈرشپ کی مثال مشکل سے ملیگی جس میں کسی دوراندیشی کی کوئی جھلک نہ ہو-

بجٹ اور صحت کا شعبہ

ایسا لگتا ہے کہ صحت کے بجٹ کی بڑھتی ہوئی ضروریات کیلئے عطیات دینے والے ملکوں کے پیسے پر زیادہ انحصار کیا جاتا ہے

بلاگ

پکوان کہانی: موسم گرما کی سوغات 'آم

پرانے وقتوں کے لوگوں کی دلچسپ تصور اور حکمت کی بدولت، پھلوں کا بادشاہ عام انسان کی غذا بن گیا۔

پاکستان میں اسٹارٹ اپس اب تک ناکام کیوں؟

آجکل یہ فیشن سا بن گیا ہے کہ ہر کوئی یہی کہتا نظر آ رہا ہے کہ اس کے پاس 'اسٹارٹ اپ' ہے-

ساغر صدیقی : ایک دل شکستہ شاعر

وہ خوبصورت نظمیں لکھتے، پھر بلند آواز میں خالی نگاہوں سے پڑھتے، پھر ان کاغذات کو پھاڑ دیتے جن پر وہ نظمیں لکھی ہوتیں

پکوان کہانی: کابلی پلاؤ - شمال کی شان

گوشت میں پکے چاول اس خطے کے جنگجوؤں کی ذہنی مطابقت اور جسمانی ساخت کے لیے موزوں تھے۔