24 جولائ, 2014 | 25 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

'پاکستان 'محفوظ پناہ گاہوں' کے خلاف کارروائی کے لیے تیار'

امریکی وزیرِ دفاع لیون پنیٹا ۔ اے پی تصویر
امریکی وزیرِ دفاع لیون پنیٹا ۔ اے پی تصویر

واشنگٹن: امریکی وزیر دفاع لیون پینیٹا نے کہا ہے کہ پاکستان نے افغان سرحد سے ملحقہ علاقوں میں موجود عسکریت پسندوں کے خلاف کارروائی پر آمادگی ظاہر کی ہے۔

کویت کے دورے کے دوران میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پنیٹا نے کہا کہ پاکستان عسکریت پسندوں کے خلاف کارروائی کی اہلیت رکھتا ہے اور پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل اشفاق پرویز کیانی نے عسکریت پسندوں کے محفوظ ٹھکانوں پر مزید دباؤ بڑھانے پر آمادگی کا اظہار کیا ہے۔

پینیٹا نے اس بات کا بھی اعتراف کیا کہ پاکستان افغان طالبان کے ساتھ پرامن حل کے لیے مذاکرات میں مدد کررہا ہے۔

یہ بیان پینٹاگون کی ایک رپورٹ کے منظر عام پر آنے کے بعد آیا ہے۔

اس رپورٹ میں تاثر دیا گیا تھا کہ پاکستان نے اب بھی دہشت گردوں کو اپنے قبائلی علاقوں میں موجود محفوظ ٹھکانوں سے کارروائیوں کی اجازت دے رکھی ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ یہ رپورٹ پرانی ہے اور اب پاکستان نے اس حوالے سے اپنی کارکردگی کافی بہتر کی ہے۔

پیر کو منظر عام پر آنے والی یہ رپورٹ کانگریس کو تین مہینے قبل بھیجی گئی تھی۔

اس رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ فاٹا میں دہشت گردوں کے محفوظ ٹھکانوں کی وجہ سے امریکہ اور اتحادی افواج افغانستان میں دہشت گردوں کو ' فیصلہ کن شکست' نہیں دے پارہے ہیں۔

پینٹاگون میں حکام نے اس رپورٹ کے حوالے سے میڈیا کے نمائندوں کو بتایا تھا کہ جولائی سے اب تک پاکستان کے ساتھ تعلقات میں بہتری آئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ نیٹو فورس پاکستان کے ساتھ مل کر آپریشن کررہی ہے لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ سب کچھ ٹھیک ہوگیا ہے کیوں کہ پاکستان میں ابھی تک دہشت گردوں کے محفوظ ٹھکانے موجود ہیں۔

اس حصے سے مزید

بلوچستان: ڈھائی سال میں پہلا پولیو کیس

یونیسیف کے مطابق پولیو وائرس کا شکار 18 ماہ کی بچی کا خاندان رواں سال کراچی سے قلعہ عبداللہ منتقل ہوا تھا۔

اسرائیلی جارحیت: نواز شریف کا ملک میں یومِ سوگ کا اعلان

جعمہ کوسرکاری عمارتوں پر قومی پرچم سرنگوں رہے گا، وزیراعظم نے غزہ کے متاثرین کیلئے 10لاکھ ڈالرامداد کا بھی اعلان کیا ہے۔

وفاقی حکومت نے آزادی تقریبات کا اعلان کر دیا

تقریبات کا اعلان کرتے ہوئے سعد رفیق نے تحریک انصاف کے مارچ کے حوالے سے سوال کا جواب دینے سے معذرت کر لی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بے وجہ پوائنٹ اسکورنگ

ہوسکتا ہے عمران خان پی ایم ایل-ن کی حکومت گرانا چاہتے ہوں لیکن کیا وہ واقعی ملک اور اسکے جمہوری اداروں کے لئے خطرہ ہیں؟

بلاگ

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔

شکایتوں کا بن جو میرا دیس ہے

شکایتی ٹٹو زنده قوم کی نشانی ہوتے ہیں۔ مستقل شکایت کرتے رہنا اب ہماری پہچان بن چکا ہے۔

کھیلنے دو: گراؤنڈز کہاں ہیں؟

سیدھی سی بات ہے، ملائی تبھی زیادہ اور بہترین ہوگی جب دودھ زیادہ ہوگا-