25 اپريل, 2014 | 24 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

'میڈیا اور عدلیہ کو مضبوط اور مستحکم بنانا چاہتے ہیں'

وزیرِ اعظم راجہ پرویز اشرف۔ رائٹرز تصویر
وزیرِ اعظم راجہ پرویز اشرف۔ رائٹرز تصویر

گوجر خان: وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ میڈیا اور عدلیہ ہمارے ادارے ہیں، انہیں مزید مضبوط و مستحکم بنانا چاہتے ہیں۔

 ہفتے کو وزیراعظم سے گوجر خان کے اکابرین کے وفد نے ملاقات کی جس میں انکا کہنا تھا کہ انہیں کسی سے سبق حاصل کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔

 وزیراعظم نے کہا کہ سستی روٹی اور لیپ ٹاپ اسکیموں کیبجائے ہم نے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام شروع کیا جسے پوری دنیا نے غربت کے خاتمے کے لیے مثالی قرار دیا ہے۔

 انہوں نے کہا کہ میڈیا اور عدلیہ آج آزاد اور ہمارے ادارے ہیں، انہیں مزید مضبوط اور مستحکم بنانا چاہتے ہیں۔

 انکا کہنا تھا کہ میڈیا، تجزیہ کاروں کی تمام تر پیشن گوئیوں کے باوجود حکومت اپنی پانچ سالہ مدت پوری کرنے جا رہی ہے۔

 وزیراعظم نے کہا کہ وہ مخالفت برائے مخالفت کے خلاف ہیں، 'کسی بھی فورم پر یہ ثابت کرنے کو تیار ہوں جو کارکردگی ہم نے دکھائی پہلے کسی نے نہیں دکھائی۔'

 انہوں نے کہا کہ پاکستان گندم درآمد کرنے سے برآمد کرنا والا ملک بن گیا ہے۔

 راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ 'قوم کو یقین دلاتا ہوں کہ آئندہ عام انتخابات آزادانہ اور شفاف ہوں گے'

 انہوں نے  کہا کہ انتخابی فہرستوں سے جعلی ووٹ ختم کر دیئے گئے ہیں، اب کوئی بوگس ووٹ نہیں ڈال سکے گا۔

 وزیراعظم نے انکشاف کیا کہ صرف گوجر خان میں ایک لاکھ، اکیس ہزار جعلی ووٹ فہرستوں سے نکالے گئے ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ فخرالدین جی ابراہیم کی بطور چیف الیکشن کمشنر تعیناتی ثابت کرتی ہے، ہم اداروں کو مستحکم کرنا چاہتے ہیں۔

اس حصے سے مزید

ملک آمریت کا متحمل نہیں ہوسکتا: خورشید شاہ

اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ سیاستدان ماضی سے سبق سیکھ چکے ہیں اور ملک کی بقا کے لیے معمولی غلطیاں نظر انداز کرنی ہوں گی۔

دھرتی کا بیٹا ننانوے برس بعد لوٹ آیا

خوشونت سنگھ کی راکھ ان کے آبائی قصبے ہڈالی میں اس سکول کی دیوار میں رکھ دی گئی، جہاں انہوں نے ابتدائی تعلیم حاصل کی تھی

جماعت اسلامی کا طالبان سے مستقل جنگ بندی کا مطالبہ

امیرِ جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ گولیوں کے بجائے منطقی دلائل کا تبادلہ کیا جانا چاہیٔے۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

تھری جی: اسکیل، رفتار اور بھروسے کا سوال

دیکھا جائے تو یہ سارا بکھیڑا بنیادی طور پر صرف ساٹھ لاکھ صارفین کے لئے ہے-

مقدّس ریپ

دو دن وہ اسی گاؤں میں ماں کے بازؤں میں تڑپتی رہی۔ گھر میں پیسے ہی کہاں تھے کہ علاج کے لئے بدین تک ہی پہنچ پاتے۔

کیپٹن امیریکہ: دی ونٹر سولجر -- ایک اور سیکوئل

ایک لازمی سیکوئل ہونے کے ناطے، فلم کو دلکش، سادہ اور قابل قبول ہونے کی نیت کے ساتھ بنایا گیا ہے۔

میڈیا اور نقل بازی کا کینسر

ایسا نہیں کہ میں کوئی پہلا انسان ہوں جس کے خیالات پر نقب لگائی گئی ہو، مگر آخری ضرور بننا چاہتا ہوں