26 جولائ, 2014 | 27 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

'میڈیا اور عدلیہ کو مضبوط اور مستحکم بنانا چاہتے ہیں'

وزیرِ اعظم راجہ پرویز اشرف۔ رائٹرز تصویر
وزیرِ اعظم راجہ پرویز اشرف۔ رائٹرز تصویر

گوجر خان: وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ میڈیا اور عدلیہ ہمارے ادارے ہیں، انہیں مزید مضبوط و مستحکم بنانا چاہتے ہیں۔

 ہفتے کو وزیراعظم سے گوجر خان کے اکابرین کے وفد نے ملاقات کی جس میں انکا کہنا تھا کہ انہیں کسی سے سبق حاصل کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔

 وزیراعظم نے کہا کہ سستی روٹی اور لیپ ٹاپ اسکیموں کیبجائے ہم نے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام شروع کیا جسے پوری دنیا نے غربت کے خاتمے کے لیے مثالی قرار دیا ہے۔

 انہوں نے کہا کہ میڈیا اور عدلیہ آج آزاد اور ہمارے ادارے ہیں، انہیں مزید مضبوط اور مستحکم بنانا چاہتے ہیں۔

 انکا کہنا تھا کہ میڈیا، تجزیہ کاروں کی تمام تر پیشن گوئیوں کے باوجود حکومت اپنی پانچ سالہ مدت پوری کرنے جا رہی ہے۔

 وزیراعظم نے کہا کہ وہ مخالفت برائے مخالفت کے خلاف ہیں، 'کسی بھی فورم پر یہ ثابت کرنے کو تیار ہوں جو کارکردگی ہم نے دکھائی پہلے کسی نے نہیں دکھائی۔'

 انہوں نے کہا کہ پاکستان گندم درآمد کرنے سے برآمد کرنا والا ملک بن گیا ہے۔

 راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ 'قوم کو یقین دلاتا ہوں کہ آئندہ عام انتخابات آزادانہ اور شفاف ہوں گے'

 انہوں نے  کہا کہ انتخابی فہرستوں سے جعلی ووٹ ختم کر دیئے گئے ہیں، اب کوئی بوگس ووٹ نہیں ڈال سکے گا۔

 وزیراعظم نے انکشاف کیا کہ صرف گوجر خان میں ایک لاکھ، اکیس ہزار جعلی ووٹ فہرستوں سے نکالے گئے ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ فخرالدین جی ابراہیم کی بطور چیف الیکشن کمشنر تعیناتی ثابت کرتی ہے، ہم اداروں کو مستحکم کرنا چاہتے ہیں۔

اس حصے سے مزید

دونوں بازوؤں سے محروم ہونے والا لڑکا لاہور ہسپتال منتقل

ملزم کے خلاف مقدمہ درج نہ ہونے اور میڈیکو- لیگل رپورٹ تیار نہ کرنے پر ہسپتال اور پولیس کے تین افسران معطل۔

سینئر صحافی مجید نظامی کا انتقال

ان کی نماز جنازہ آج صبح نو بجے لاہور کے باغ جناح میں ادا کی جائیگی۔

لاہور: تین سالہ بچی کے ساتھ ریپ کا انسانیت سوز واقعہ

نامعلوم افراد بچی کو ریپ کا نشانہ بنا کر اُسے گرین بیلٹ کے قریب پھینک کر فرار ہو گئے۔ بچی کی حالت تشویشناک ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

تھوڑا سا احترام

آپ ایک مایوس، خوفزدہ بیوروکریسی سے کیا توقع کرسکتے ہیں جنہیں اپنی سمت کا علم نہ ہو؟

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بلاگ

گھریلو تشدد: پاکستانی 'کلچر' - حقیقت کیا ہے؟

پاکستانی سماج میں عورت مرد کی جائداد اور اس سے کمتر ہے چناچہ اس کے ساتھ کسی قسم کا سلوک روا رکھنا مرد کا پیدائشی حق ہے-

ریاستی تنہائی اور اجتماعی مہاجرت

جب تک سوچنے اور سوچ کے اظہار کے لیے ممکنہ حد تک ازادی موجود نہ ہو تب تک سماج میں تکثیریت پروان نہیں چڑھ سکتی

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔