20 ستمبر, 2014 | 24 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

'میڈیا اور عدلیہ کو مضبوط اور مستحکم بنانا چاہتے ہیں'

وزیرِ اعظم راجہ پرویز اشرف۔ رائٹرز تصویر
وزیرِ اعظم راجہ پرویز اشرف۔ رائٹرز تصویر

گوجر خان: وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ میڈیا اور عدلیہ ہمارے ادارے ہیں، انہیں مزید مضبوط و مستحکم بنانا چاہتے ہیں۔

 ہفتے کو وزیراعظم سے گوجر خان کے اکابرین کے وفد نے ملاقات کی جس میں انکا کہنا تھا کہ انہیں کسی سے سبق حاصل کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔

 وزیراعظم نے کہا کہ سستی روٹی اور لیپ ٹاپ اسکیموں کیبجائے ہم نے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام شروع کیا جسے پوری دنیا نے غربت کے خاتمے کے لیے مثالی قرار دیا ہے۔

 انہوں نے کہا کہ میڈیا اور عدلیہ آج آزاد اور ہمارے ادارے ہیں، انہیں مزید مضبوط اور مستحکم بنانا چاہتے ہیں۔

 انکا کہنا تھا کہ میڈیا، تجزیہ کاروں کی تمام تر پیشن گوئیوں کے باوجود حکومت اپنی پانچ سالہ مدت پوری کرنے جا رہی ہے۔

 وزیراعظم نے کہا کہ وہ مخالفت برائے مخالفت کے خلاف ہیں، 'کسی بھی فورم پر یہ ثابت کرنے کو تیار ہوں جو کارکردگی ہم نے دکھائی پہلے کسی نے نہیں دکھائی۔'

 انہوں نے کہا کہ پاکستان گندم درآمد کرنے سے برآمد کرنا والا ملک بن گیا ہے۔

 راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ 'قوم کو یقین دلاتا ہوں کہ آئندہ عام انتخابات آزادانہ اور شفاف ہوں گے'

 انہوں نے  کہا کہ انتخابی فہرستوں سے جعلی ووٹ ختم کر دیئے گئے ہیں، اب کوئی بوگس ووٹ نہیں ڈال سکے گا۔

 وزیراعظم نے انکشاف کیا کہ صرف گوجر خان میں ایک لاکھ، اکیس ہزار جعلی ووٹ فہرستوں سے نکالے گئے ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ فخرالدین جی ابراہیم کی بطور چیف الیکشن کمشنر تعیناتی ثابت کرتی ہے، ہم اداروں کو مستحکم کرنا چاہتے ہیں۔

اس حصے سے مزید

انتخابات میں کراچی سے خیبر تک دھاندلی ہوئی، بلاول بھٹو زرداری

پیپلزپارٹی بھی 2013 کے انتخابات میں دھاندلی کا ہدف بنی مگر ہم نے جمہوریت کو جاری رکھنے کے لیے نتائج کو قبول کیا۔

عوامی تحریک کے کارکنوں کی نظربندی غیر قانونی قرار

لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب بھر میں عوامی تحریک کے کارکنوں کی نظر بندی کو غیر قانونی قرار دیا، رہائی کے احکامات جاری۔

گلو بٹ پر پولیس پر حملے کی فردِ جرم عائد

جبکہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کی ٹی وی فوٹیج میں اس کو ماڈل ٹاؤن میں پولیس کی موجودگی میں گاڑیوں کے شیشے توڑتے دکھایا گیا تھا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

رودرہیم کا سبق

بچوں پر ہونیوالے جنسی تشدد پر ہماری شرمندگی کی سمت غلط ہے۔ شرم کی بات تو یہ ہے کہ ہم اس کو روکنے کی کوشش نہ کریں-

رکاوٹیں توڑ دو

اشرافیہ تعلیمی نظام کا بیڑہ غرق کرنے پر تلی ہوئی ہے جو خاص طور سے 1970ء کی دہائی کے بعد سے بد سے بدتر ہورہاہے۔

بلاگ

مووی ریویو: دختر -- دلوں کو چُھو لینے والی کہانی

اپنی تمام تر خوبیوں اور کچھ خامیوں کے ساتھ اس فلم کو پاکستانی نکتہ نگاہ سے پیش کیا گیا ہے۔

پھر وہی ڈیموں پر بحث

ڈیموں سے زراعت کے لیے پانی ملتا ہے، پانی پر کنٹرول سے بجلی پیدا کی جاسکتی ہے اور توانائی بحران ختم کیا جاسکتا ہے۔

شاہد آفریدی دوبارہ کپتان، ایک قدم آگے، دو قدم پیچھے

اس بات کی ضمانت کون دے گا کہ ماضی کی طرح وقار یونس اور شاہد آفریدی کے مفادات میں ٹکراؤ پیدا نہیں ہوگا۔

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔