24 جولائ, 2014 | 25 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

عراق میں بم دھماکوں سے 7 افراد ہلاک، 27 زخمی

کرکوک میں کار بم دھماکے بعد فائر بریگیڈ کا اہلکار گاڑی میں لگی آگ بجھانے کی کوشش کر رہا ہے۔ فائل فوٹو اے ایف پی۔۔۔

کرکوک: عراق کے شمالی شہر کرکوک میں اتوار اہل تشیع کی عبادت گاہوں پر ہونے والے بم دھماکوں میں پانچ افراد ہلاک ہو گئے جبکہ کرد پولیٹیکل دفتر پر ہونے والے حملے میں دو افراد جان کی بازی ہار گئے۔

سینئر پولیس آفیسر نے اے ایف پی کو بتایا کہ کرکوک کے شمال اور جنوب میں شیعہ مسلمانوں کی دو عبادت گاہوں کو دو کار بم دھماکوں اور سات سڑک کنارے نصب بم دھماکوں سے نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں پانچ افراد ہلاک اور 14 زخمی ہو گئے۔

افسر کے مطابق حملے رات ساڑھے سات بجے کیے گئے، کرکوک جنرل اسپتال کے ایک ڈاکٹر نے ہلاکتوں کی تصدیق کی ہے۔

ایک پولیس افسر کے مطابق اتوار کو ہی صوبے دیالا کے علاقے جلاولا میں عراق کے صدر جلال طالبانی کی پارٹی کے مقامی ہیڈکوارٹر کے باہر اس وقت کار بم دھماکہ ہوا جب لوگوں کی بڑی تعداد کرد پیش مرگا سیکیورٹی فورسز کو جوائن کرنے کیلیے جمع ہوئی تھی۔

جلاولا اسپتال کے ڈاکٹر اور پولیس افسر کے مطابق جلاولا جو کرکوک کی طرح متنازع علاقے میں واقع ہے میں ہونے والے حملے میں دو افراد ہلاک 13 زخمی ہو گئے۔

اس حصے سے مزید

غزہ: فوجی آپریشن کا سترھواں روز، ہلاکتوں کی تعداد 700 سے زائد

دوسری جانب حماس نے فضائی کمپنیوں کی جانب سے اسرائیل کے لیے اپنی سروس بند کیے جانے کو ایک عظیم کامیابی قرار دیا ہے۔

حماس ایک 'مضبوط دشمن' بن چکا ہے، اسرائیل کا اعتراف

حماس کے جنگجو تربیت یافتہ ہیں، ان کے پاس سپلائز کی کوئی کمی نہیں اور ان کے حوصلے بلند ہیں، ترجمان اسرائیلی فوج۔

سعودی عرب: جرائم کی شرح میں 102 فیصد اضافہ

وزارتِ انصاف کے مطابق 2012ء میں جرائم کی تعداد دس ہزار نو سو چار تھی، جو 2013ء میں بائیس ہزار ایک سو تیرہ تک پہنچ گئی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بے وجہ پوائنٹ اسکورنگ

ہوسکتا ہے عمران خان پی ایم ایل-ن کی حکومت گرانا چاہتے ہوں لیکن کیا وہ واقعی ملک اور اسکے جمہوری اداروں کے لئے خطرہ ہیں؟

بلاگ

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔

شکایتوں کا بن جو میرا دیس ہے

شکایتی ٹٹو زنده قوم کی نشانی ہوتے ہیں۔ مستقل شکایت کرتے رہنا اب ہماری پہچان بن چکا ہے۔

کھیلنے دو: گراؤنڈز کہاں ہیں؟

سیدھی سی بات ہے، ملائی تبھی زیادہ اور بہترین ہوگی جب دودھ زیادہ ہوگا-