24 اپريل, 2014 | 23 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

وزیرستان میں ڈرون حملے میں 17 افراد ہلاک

امریکی ڈرون۔ فائل تصویر رائٹرز
امریکی ڈرون۔ فائل تصویر رائٹرز

پشاور: پائلٹ کے بغیر حملہ کرنے والے طیارے ڈرون سے جنوبی اور شمالی وزیرستان میں میزائل داغے گئے جن میں ڈان نیوز کے مطابق اب تک 17  افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

مختلف نشانوں پر ڈرون نے دس میزائل فائر کئے جن میں سات افرادزخمی  بھی ہوئے ہیں۔

شبہ ہے کہ اس حملے میں شدت پسند گروہ کے اہم کمانڈر بھی ہلاک ہوئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق بابر گڑھ علاقہ جو شمالی اور جنوبی وزیرستان کے بیچ واقع ہے وہاں چار ڈرونز نے دس کے قریب میزائل داغے۔ اس حملے میں تحریکِ طالبان پاکستان سے وابستہ کمانڈر عمران پنجابی کی ہلاکت کی اطلاع ہے۔

حملے میں تین مکانات کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

ان حملوں کے بعد بھی علاقے کی فضاؤں میں ڈرون پروازیں دیکھی گئیں جبکہ لوگوں نے اپنی مدد آپ کے تحت امدادی کارروائیاں شروع کردی ہیں۔

آفیشل ذرائع کا کہنا ہے کہ ان ڈرون حملوں میں خودکش حملوں کے ماسٹر مائنڈ ولی محمد الیاس عرف طوفان محسود بھی ہلاک ہو گئے، ذرائع کا کہنا ہے کہ ولی تحریک طالبان پاکستان کے قائد حکیم اللہ محسود کے کزن تھے۔

اس حصے سے مزید

خیبر ایجنسی میں فورسز کی کارروائی۔ 24 شدت پسند ہلاک

ذرائع کے مطابق ہلاک ہونے والوں میں وہ شدت پسند بھی شامل ہیں جو اسلام آباد سبزی منڈی اور پشاور دھماکے میں ملوث تھے۔

مشرف غداری کیس: 'ایف آئی اے کی رپورٹ فراہم نہ کرنا بدنیتی ہے'

سپریم کورٹ نے اپنے فیصلوں میں بنیادی حقوق کو ہر قانون سے بالاتر قرار دیا ہے، بیرسٹر فروغ نسیم۔

'پاکستانی اداروں پر ہندوستانی الزامات بے بنیاد ہیں'

پاکستان نے صحافی حامد میر پر حملے سے متعلق ہندوستانی میڈیا کے پاکستانی سیکورٹی اداروں پرلگائے گئے الزامات کو مسترد کردیا


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (1)

Amir Nawaz Khan
07 جنوری, 2013 12:39
قاری عمران، صیلب اور کمانڈر ولی محمد المعروف طوفان محسود جو کہ حکیم اللہ محسود کا کزن تھا بھی اس ڈرون حملے میں مارا گیا ہے ۔یہ ڈرون حملہ تحریک طالبان پاکستان کے ۳ تربیتی مراکز، واقع بابر گڑھ پر اتوار کی صبح کیا گیا تھا اور مرنے والے محسود قبیلے و پنجابی طالبان سے تعلق رکھتے ہیں۔ وزیر ستان میں القائدہ اور طالبان کے تمام گروپوں اور غیر ملکی جہادیوں کے محفوظ ٹھکانے ہیں۔ القائدہ کے دہشت گردوں اور دوسرے ملکی و غیر ملکی دہشت گردوںکا مارا جانا اس چیز کا ثبوت ہے کہ ڈرون حملے دہشت گردوں کے خلاف ہو رہے ہیں اور پاکستان کے مفاد میں ہیں۔ صوبہ خیبرپختونخواہ کے سینئر وزیر اور عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما بشیر بلور نے کہا کہ دُنیا کے تمام دہشت گرد ہمارے علاقے میں موجود ہیں۔ انہوں نے مزید کہاکہ شمالی وزیرستان میں مقامی لوگ کم اور ازبک، تاجک اور داغستان کے لوگ زیادہ نظر آئیں گے.اسامہ بن لادن و ایمن الظواہری کے ساتھی غیرملکی دہشت گرد وزیرستان کے بڑے حصہ پر قبضہ کئے بیٹھے ہیں اور انہوں نے پاکستان کی خود مختاری اور سالمیت کو چیلنج کر کے اسےخطرے میں ڈال دیا ہے۔ شدت پسندوں نے وزیرستان کے امن پسند لوگوں کو یرغمال بنا رکھا ہے اور وزیرستان میں اب بے پناہ غربت ہے۔ ڈرون حملے عسکریت پسند وں پر کئے جاتے ہیں اور ہلاک ہونے والے شدت پسند ہی ہوتےہیں جو نہ صرف پاکستان بلکہ دوسرے ممالک کے لئے بھی ایک خطرہ ہیں۔۔ ڈرون حملوں سے عام شہریوں کو کسی قسم کا خطرہ لاحق نہ ہے ۔
مقبول ترین
بلاگ

مقدّس ریپ

دو دن وہ اسی گاؤں میں ماں کے بازؤں میں تڑپتی رہی۔ گھر میں پیسے ہی کہاں تھے کہ علاج کے لئے بدین تک ہی پہنچ پاتے۔

میڈیا اور نقل بازی کا کینسر

ایسا نہیں کہ میں کوئی پہلا انسان ہوں جس کے خیالات پر نقب لگائی گئی ہو، مگر آخری ضرور بننا چاہتا ہوں

!مار ڈالو، کاٹ ڈالو

مجھے احساس ہوا کہ مجھے اس پر شدید غصہ آ رہا ہے اور میں اسے سچ بولنے پر چیخ چیخ کر ڈانٹنا چاہتا ہوں-

خطبہء وزیرستان

کس سازش کے تحت 'آپکو' بدنام کرنے کے لئے دھماکے کیے جاتے ہیں؟ کس صوبے کے مظلوم عوام آپکے بھائی ہیں؟