25 اپريل, 2014 | 24 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

مارچ ہر صورت ہوگا، ڈاکٹر طاہر القادری

عدالتی فیصلوں کے بعد لانگ مارچ کو روکنا توہین عدالت ہوگا، بم دھماکہ ہوا تو ذمہ دار صدر اور وزیراعظم ہونگے، سربراہ ٹی ایم کیو۔ اے پی فوٹو۔
عدالتی فیصلوں کے بعد لانگ مارچ کو روکنا توہین عدالت ہوگا، بم دھماکہ ہوا تو ذمہ دار صدر اور وزیراعظم ہونگے، سربراہ ٹی ایم کیو۔ اے پی فائل فوٹو۔

لاہور: تحریک منہاج القرآن (ٹی ایم کیو) کے سربراہ علامہ طاہرالقادری نے واضح کیا ہے کہ لانگ مارچ کسی قیمت پرنہیں رکے گا۔

لاہور میں جمعے کو پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے طاہرالقادری نے کہا کہ لانگ مارچ کو غیر آئنی و غیر قانونی قرار دینے کی تین درخواستیں اعلٰی عدلیہ نے مسترد کردی ہیں۔

انکا کہنا تھا کہ عدالتی فیصلوں کے بعد لانگ مارچ کو روکنا توہین عدالت ہوگا۔

طاہر القادری نے اعلان کیا کہ اگر لانگ مارچ میں کوئی دھماکا ہوا تواس کے ذمہ دار صدر زرداری، وزیراعظم راجہ پرویز اشرف، وزیر داخلہ رحمان ملک، مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف اور وزیراعلٰی پنجاب شہباز شریف اور وزیر قانون پنجاب رانا ثنااللہ ہونگے۔

ٹی ایم کیو کے سربراہ نے ملک میں جاری دہشتگردی پروفاقی و پنجاب کوسخت تنقید کانشانہ بنایا۔ ان کا کہنا تھا دونوں حکومتیں خود دہشتگردی کرانے میں ملوث ہیں یا اسے روکنے کی اہلیت نہیں رکھتیں۔

انہوں نے کہا کہ وہ کسی صورت لانگ مارچ سے پیچھے نہیں ہٹیں گے، دھماکے اور گولیاں انکا راستہ نہیں روک سکتیں۔

اس حصے سے مزید

'حکومت فوج کے ساتھ مل کر چیلنجز کا سامنا کررہی ہے'

وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ حکومت وسیع بنیادوں پر کام کررہی ہے اور گوادر ملکی معیشت کی تبدیلی میں مدد گار ثابت ہوگا۔

غیرملکی عسکریت پسندوں کو محفوظ راستے کی تلاش

ایک جانب حکومت عسکریت پسندوں کے ساتھ مذاکرات میں مصروف ہے تو دوسری جانب غیرملکی عسکریت پسند بے یقینی سے دوچار ہیں۔

صوابی: فائرنگ سے ایک ہی خاندان کے پانچ افراد ہلاک

اس واقعے میں آٹھ افراد زخمی بھی ہوئے ہیں، جن میں خواتین و بچے بھی شامل ہیں۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (1)

Mohammad Jehangir
11 جنوری, 2013 13:43
اقبال جہانگیر کا تازہ بلاگ : لانگ مارچ پر حملہ کا منصوبہ http://www.awazepakistan.wordpress.com
مقبول ترین
بلاگ

تھری جی: اسکیل، رفتار اور بھروسے کا سوال

دیکھا جائے تو یہ سارا بکھیڑا بنیادی طور پر صرف ساٹھ لاکھ صارفین کے لئے ہے-

مقدّس ریپ

دو دن وہ اسی گاؤں میں ماں کے بازؤں میں تڑپتی رہی۔ گھر میں پیسے ہی کہاں تھے کہ علاج کے لئے بدین تک ہی پہنچ پاتے۔

کیپٹن امیریکہ: دی ونٹر سولجر -- ایک اور سیکوئل

ایک لازمی سیکوئل ہونے کے ناطے، فلم کو دلکش، سادہ اور قابل قبول ہونے کی نیت کے ساتھ بنایا گیا ہے۔

میڈیا اور نقل بازی کا کینسر

ایسا نہیں کہ میں کوئی پہلا انسان ہوں جس کے خیالات پر نقب لگائی گئی ہو، مگر آخری ضرور بننا چاہتا ہوں