01 اکتوبر, 2014 | 5 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

ہزارہ برادری کو تحفظ دیا جائے،الطاف حسین

 - اے پی پی فوٹو
- اے پی پی فوٹو

کراچی:  متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) کے قائد الطاف حسین نے وزیراعظم راجہ پرویز اشرف اور وفاقی وزیرداخلہ رحمان ملک سے ٹیلیفونک رابطہ کیا ہے۔

ڈان نیوز کے مطابق، ہفتہ کو الطاف حسین نے وزیراعظم راجہ پرویز اشرف اور وزیرداخلہ رحمن ملک سے بات کرتے ہوئے کہا کہ کوئٹہ میں ہزارہ کمیونٹی کے لوگوں کا مسلسل قتل عام کیا جارہا ہے لیکن انہیں تحفظ فراہم کرنے والا کوئی نہیں ہے بم دھماکوں اور دہشت گردی کے واقعات میں 100 افرادکی ہلاکت پر کوئی حکومتی شخصیت متاثرین سے اظہار ہمدردی کیلئے نہیں پہنچی۔

وزیراعلیٰ بلوچستان ملک سے باہر اور وزراء غائب ہیں، ہزارہ کمیونٹی کے افراد اپنے پیاروں کی میتیں سڑک پر رکھ کر سخت سردی اور بارش کے باوجود رات بھر احتجاج کرتے رہے۔

ایم کیو ایم کے قائد نے کہا کہ جان و مال کا تحفظ فراہم کیا جائے لیکن یہ امر افسوسناک ہے کہ صوبائی حکومت نے اس پر بالکل بھی کوئی توجہ نہیں دی اور مسئلے کا حل نکالنے کی کوئی کوشش نہیں کی۔

انہوں نے وزیراعظم اور وفاقی وزیرداخلہ سے کہا کہ اگر صوبائی حکومت اور صوبائی اسمبلی اس مسئلے کو حل نہیں کرسکتی تو اس مسئلے کا متبادل حل نکالا جائے۔

الطاف حسین نے مزید کہا کہ اتنے بڑے سانحہ پر مسلسل بے حسی کا مظاہرہ کرنے پر حکومت بلوچستان سے پوچھا جائے۔

اس حصے سے مزید

کراچی: ایس پی سی آئی ڈی آپریشنز چوہدری صفدر پر حملہ

حملہ کراچی کے علاقے گارڈن میں ایکسپریس وے کے قریب کیا گیا جس میں وہ محفوظ رہے، ایک حملہ آور گرفتار کرلیا گیا۔

پاکستان کے ہندو، بے وطن لوگ

روی دیوانی پاکستانی ہندوؤں کو ’’بے وطن لوگ‘‘ قرار دیتے ہیں، جو ’’ہندوستان میں پاکستانی ہیں، اور پاکستان میں ہندو‘‘۔

رحمان ملک کی جہاز سے بے دخلی، ویڈیو بنانے والا ملازمت سے فارغ

ارجمند اظہر حسین کی سابق کمپنی جیریز گروپ نے اپنے فیس بک پیج پر کہا ہے کہ یہ فیصلہ میرٹ کی بناء پر کیا گیا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

فائرنگ کی زد میں

پولیس کی قیادت کو ادراک ہوا ہے کہ اسے صاحب اختیار لوگوں کے غیر قانونی مطالبات کو نا کہنے کی ہمت دکھانے کی ضرورت ہے.

پالیسی سازی کا فن

پنجاب میں باربارآنے والے سیلاب نے فیصلہ سازی اور پالیسی سازی کے درمیان خلا کو بےنقاب کردیا ہے۔

بلاگ

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟

مووی ریویو: دی پرنس — انسپائر کرنے میں ناکام

مجموعی طور پر روبوٹ جیسی پرفارمنسز اور کمزور پلاٹ کی وجہ سے یہ فلم ناظرین کی دلچسپی قائم رکھنے میں ناکام رہی-

مخلص سیاستدانوں کے سچے بیانات

جب سے دھرنے جاری ہیں، تب سے ہم نے سیاستدانوں سے طرح طرح کی باتیں سنی ہیں جن میں سے کچھ پیش خدمت ہیں۔