02 ستمبر, 2014 | 6 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

ہزارہ برادری کو تحفظ دیا جائے،الطاف حسین

 - اے پی پی فوٹو
- اے پی پی فوٹو

کراچی:  متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) کے قائد الطاف حسین نے وزیراعظم راجہ پرویز اشرف اور وفاقی وزیرداخلہ رحمان ملک سے ٹیلیفونک رابطہ کیا ہے۔

ڈان نیوز کے مطابق، ہفتہ کو الطاف حسین نے وزیراعظم راجہ پرویز اشرف اور وزیرداخلہ رحمن ملک سے بات کرتے ہوئے کہا کہ کوئٹہ میں ہزارہ کمیونٹی کے لوگوں کا مسلسل قتل عام کیا جارہا ہے لیکن انہیں تحفظ فراہم کرنے والا کوئی نہیں ہے بم دھماکوں اور دہشت گردی کے واقعات میں 100 افرادکی ہلاکت پر کوئی حکومتی شخصیت متاثرین سے اظہار ہمدردی کیلئے نہیں پہنچی۔

وزیراعلیٰ بلوچستان ملک سے باہر اور وزراء غائب ہیں، ہزارہ کمیونٹی کے افراد اپنے پیاروں کی میتیں سڑک پر رکھ کر سخت سردی اور بارش کے باوجود رات بھر احتجاج کرتے رہے۔

ایم کیو ایم کے قائد نے کہا کہ جان و مال کا تحفظ فراہم کیا جائے لیکن یہ امر افسوسناک ہے کہ صوبائی حکومت نے اس پر بالکل بھی کوئی توجہ نہیں دی اور مسئلے کا حل نکالنے کی کوئی کوشش نہیں کی۔

انہوں نے وزیراعظم اور وفاقی وزیرداخلہ سے کہا کہ اگر صوبائی حکومت اور صوبائی اسمبلی اس مسئلے کو حل نہیں کرسکتی تو اس مسئلے کا متبادل حل نکالا جائے۔

الطاف حسین نے مزید کہا کہ اتنے بڑے سانحہ پر مسلسل بے حسی کا مظاہرہ کرنے پر حکومت بلوچستان سے پوچھا جائے۔

اس حصے سے مزید

وزیراعظم، وزیرداخلہ کی نااہلی کے لیے درخواست دائر

سندھ ہائی کورٹ میں دائر درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ نواز شریف کو آرٹیکل باسٹھ اور تریسٹھ کے تحت نااہل قرار دیا جائے

کراچی: دو پولیس اہلکار ٹارگٹ کلنگ میں ہلاک

آج صبح نامعلوم دہشت گردوں نے گشت پر مامور موٹر سائکل سوار پولیس اہلکاروں کو فائرنگ کا نشانہ بنایا۔

اسلام آباد احتجاج میں ایم کیو ایم کی شرکت کا امکان

متحدہ قومی موومنٹ کے فاروق ستار کا کہنا ہے کہ اگر حکومت نے مظاہرین پر تشدد کا جاری رکھا تو ہمیں بھی سڑکوں پر آنا پڑے گا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

احتیاطی نظربندی کا غلط قانون

فوجی اور سویلین حکومتوں نے باقاعدگی سے احتیاطی نظربندی کو اپنے مخالفین کو خاموش کرنے اوردھمکانے کے لیے استعمال کیا ہے۔

توجہ طلب شعبہ

بجلی کی لائنیں لگانے اور مرمت کرنے کو دنیا کے دس خطرناک ترین پیشوں میں شمار کیا جاتا ہے-

بلاگ

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔

تاریخ کی تکرار

پولیس پر تشدد اور دہشت گردی کا الزام لگانے والے کیا اپنے گھروں پر کسی ایرے غیرے نتھو خیرے کو چڑھائی کی اجازت دیں گے؟

آبی مسائل کا ذمہ دار ہندوستان یا خود پاکستان؟

پاکستان میں پانی اور بجلی کے بحران کی وجہ پچھلے 5 عشروں سے پانی کے وسائل کی خراب مینیجمنٹ ہے۔

نوازشریف: قوت فیصلہ سے محروم

نواز شریف اپنے بادشاہی رویے کی وجہ سے پھنس چکے ہیں، جو فیصلے انہیں چھ ماہ پہلے کرنے چاہیے تھے وہ آج کر رہے ہیں۔