28 اگست, 2014 | 1 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

رحمان ملک نے لانگ مارچ کو جمہوریت کش حملہ قرار دیدیا

وزیر داخلہ رحمان ملک صحافیوں سے گفتگو کر رہے ہیں۔ فائل فوٹو آن لائن۔۔۔

لاہور: وفاقی وزیر داخلہ رحمن ملک نے طاہر القادری کا لانگ مارچ کو جموریت کش حملہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر طاہر القادری پر حملہ ہوا تو اس کی ذمے حکومت نہیں، خود طاہر القادری ہوں گے۔

لاہور رائے وانڈ میں مسلم لیگ ن کے قائد  میاں نواز شریف کے بھائی کی تعزیت کرنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رحمان ملک نے کہا کہ  طاہرالقادری کے پاس لانگ مارچ کے لیے فنڈز کہاں سے آئے، مارچ کون کروا رہا اور اس کےمقاصد کیا  ہیں اور  یہ سب کچھ کس کے کہنے پر کروایا جارہا ہے۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ ڈاکٹر صاحب خود ہی عوام کو بتا دیں ورنہ ایف آئی اے تحقیقات کا حق رکھتی ہے۔

رحمان ملک نے کہا کہ طاہرالقادری کا ایجنڈا سمجھ سے باہرہے، وہ لانگ مارچ کر کے  سانحہ کوئٹہ، کراچی اور سوات جیسے حالات پیدا کرنا چاہتے ہیں۔

انہوں نےکہا کہ لانگ مارچ انتخابات ملتوی کرانے کی سازش ہے جسے کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔

وزیرداخلہ  نے کہا  کہ لاکھوں لوگوں کو سیکیورٹی فراہم نہیں کی جاسکتی، انہوں نے کہا کہ لانگ مارچ میں کمبل لانے والے لوگ ہینڈ گرینیڈ بھی لا سکتے ہیں۔

رحمن ملک  نے یہ بتایا کہ ہمارے پاس  اطلا عات ہیں اور تحریک   طالبان کے ترجمان احسان نے بھی کہا ہے کہ  وہ  قافلوں پر حملہ کریں گے۔

انہوں نے کہا ایک مرتبہ پھر دہرایا کہ طاہرالقادری کی جان کوخطرہ ہے تاہم ان کا کہنا تھا کہ اگر ڈاکٹر قادری پر حملہ ہوا تو اسکی ذمے دار حکومت نہیں بلکہ وہ خود ہوں گے۔

اس حصے سے مزید

'سانحہ ماڈل ٹاؤن کی ایف آئی آر درج کروانے کے لیے تیار ہیں'

وفاقی وزیرِ ریلوے سعد رفیق کا کہنا ہے کہ ایف آئی آر میں وزیراعظم نواز شریف سمیت تمام 21 اعلیٰ حکام کو شامل کیا جائے گا۔

وزیراعظم کا دورہ منسوخ، صدر ترکی روانہ

صدر ممنون حسین سمیت چھیاسٹھ ممالک کے سربراہان مملکت ترک صدر طیب اردگان کی تقریبِ حلف برداری میں شرکت کریں گے۔

انتخابات 2013ء کو کالعدم قرار دینے کی درخواست سماعت کے لیے منظور

لاہور ہائیکورٹ میں دائر کی گئی درخواست میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم، وزیراعلیٰ پنجاب اور دیگر کو کام کرنے سے روک دیا جائے


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

دو کشتیوں کے سوار نواز شریف

نواز شریف کے مطابق اگر ان کو طاقت کے زور پر نکالا گیا تو پاکستان کو سنبھالنا مشکل ہوجائے گا۔

پاکستان میں جمہوریت

کیا جمہوریت پاکستان میں عوام کیلیے ہے یا حکمرانوں کو انتخابات میں دوبارہ منتخب ہونے کی یقین دہانی کیلیے ہے؟

بلاگ

آزادی کے سائیڈ افیکٹس

اس قوم کا مزید آزادی کی بات کرنا بہت حیران کن ہے۔ یہ قوم تو آزادی کے سائیڈ افیکٹس کا شکار ہے۔

'آزادی' کے بعد: 'نیا پاکستان' اور 'انقلابی کابینہ'

سب سے زیادہ توجہ میڈیا پر دینی ہوگی اور گندی مچھلیوں سے پاک کرنے کے لئے تمام 'ملک دشمن' چینلز پر فوری پابندی لگانی ہوگی

مووی ریویو: ٹین ایج میوٹنٹ ننجا ٹرٹلز

تباہی و بربادی کے سینز، سپر ہیروز اور ایک حسینہ والے کامیاب ثابت شدہ فارمولے فلم کا حصہ رہے۔

تجزیوں کا بخار

گھر کے تمام افراد کو اتنے گروپس میں تقسیم کیا جا سکتا ہے، جتنے کہ تجزیہ کار موجود ہیں۔