21 اپريل, 2014 | 20 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

بلوچستان اسمبلی میں گورنر راج کیخلاف قرار داد منظور

بلوچستان اسمبلی کا ایک منظر۔ فائل تصویر
بلوچستان اسمبلی کا ایک منظر۔ فائل تصویر

کوئٹہ: بلوچستان اسمبلی میں گورنر راج کے نفاذ، باچا خان چوک بم دھماکے اور علمدار روڈ کے سانحے پر تین علیحدہ علیحدہ قراردادیں منظور کرلی گئی ہیں۔

اسمبلی کا اجلاس تین گھنٹے کی تاخیر سے شروع ہوا۔ سانحہ کوئٹہ کے خلاف قرارداد جمعت العلمائے اسلام کے رکن اسمبلی عین اللہ شمس نے پیش کی۔ قرارداد میں سانحہ کوئٹہ کی عدالتی تحقیقات کا مطالبہ کیا گیا۔

ایوان نے دونوں بم دھماکوں میں جاں بحق ہونیوالوں کیلیے فاتحہ خوانی کی گئی ۔

 ایوان نے گورنر راج کے نفاذ کے خلاف ازاد رکن اسمبلی شاہنواز مری کی جانب سے پیش کی گئ قرارداد کثرت رائے سے منظور کرلی۔

 قرارداد پیش کرتے ہوئے شاہنواز مری نے کہا کہ گورنر راج کا نفاذ جمہوریت پر شب خون مارنے کے مترادف ہے۔

 انہوں نے کہا کہ ایبٹ اباد میں اسامہ کے خلاف اپریشن ہوا جی ایچ کیو اور کامرہ ایئربیس پر حملے ہوئے لیکین وہاں گورنر راج نافز نہیں ہوا ، جبکہ بلوچستان  میں دوبم  دھماکوں کے بعد گورنرراج نافذ کیا گیا۔

ایوان نے گورنر راج کے خاتمے کا مطالبہ کیا جبکہ اجلاس سے قبل ایف سئ نے اسمبلی کی عمارت کو تحویل میں لیا اور کسی کو اندر جانے کی اجازت نہیں دی جارہی تھی تاہم بعد میں گورنر بلوچستان نواب ذوالفقار مگسی کی جانب سے اس بیان کے بعد کہ اسمبلی بحال ہے اسکے بعد ایف سی اہلکار واپس چلے گئے۔

اس حصے سے مزید

کوئٹہ: فائرنگ سے تین افراد ہلاک

فائرنگ ایک گاڑی پر کی گئی، جس میں سوار دو افراد ہلاک ہوگئے، جبکہ ایک راہگیر بھی فائرنگ کی زد میں آکر ہلاک ہوا۔

پنجگور: ایف سی سے فائرنگ کا تبادلہ، تین عسکریت پسند ہلاک

سیکورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپوں کے نتیجے میں متعدد عسکریت پسند زخمی بھی ہوئے، ترجمان فرنٹیئر کورپس ۔

کوئٹہ: پرتشدد واقعات میں چار افراد ہلاک

واقعہ کے بعد نامعلوم افراد فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے، تاہم پولیس کی بھاری نفری فوری طور پر موقع پر پہنچ گئی۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

نریندر مودی اور نواز شریف ساتھ ساتھ

اگر بی جے پی حکومت بنانے میں کامیاب ہوتی ہے تو 1998 کی طرح آج بھی پاکستان میں نواز شریف کی ہی حکومت ہوگی۔

دنیاۓ صحافت: داستاں تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں

ایک فوجی کی طرح صحافی کو بھی ہرگز اکیلا نہیں چھوڑا جاسکتا، یہ سوچنا کہ یہ ہماری جنگ نہیں، سراسر حماقت ہے-

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-

سچ، گولی اور بے بس جرنلسٹ

حامد میر پر حملہ ایک بار پھر صحافی برادری کی بے بسی کی طرف اشارہ کرتا ہے