16 اپريل, 2014 | 15 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

طاہرالقادری انتخابات میں حصہ لے سکتے ہیں

 تحریک منہاج القرآن کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری۔ اے ایف پی فوٹو۔
تحریک منہاج القرآن کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری۔ اے ایف پی فوٹو۔

اسلام آباد: تحریک منہاج القرآن کے ترجمان کا کہنا ہے کہ تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہرالقادری سیاسی اصلاحات اور کرپشن کے خاتمے کیلیے اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے۔

یاد رہے کہ طاہرالقادری نے اسلام آباد میں ہزاروں مظاہرین کے دھرنے کی قیادت کی تھی تاہم جمعرات کو حکومت کے ساتھ ہونے والے معاہدے کے بعد احتجاج ختم کرنے پر رضامند ہوگئے تھے۔

سیکرٹری انفارمیشن فیض الاسلام کے مطابق، انتخابابی اصلاحات کے معاہدے پر دستخط کرنے کے بعد اب وہ انتخابی عمل کا حصہ بن چکے ہیں اور آنے والے عام انتخابات میں حصہ لے سکتے ہیں تاہم انہوں نے اس بات کی وضاحت کی کہ طاہرالقادری کا وزیراعظم بننے کا ارادہ نہیں ہے۔

معاہدے کے مطابق، طاہرالقادری کو نگران حکومت تشکیل دینے کے مرحلے کا حصہ بنایا جائے گا جبکہ اسمبلیاں 16 مارچ کو تحلیل کردی جائیں گی تاہم کوئی مخصوص تاریخ وضح نہیں کی گئی۔

معاہدے میں مزید کہا گیا کہ اسمبلیاں تحلیل ہونے کے 90 دن کے اندر انتخابات کرائے جائیں گے جبکہ انتخابی اصلاحات پر بات چیت جاری رہے گی۔

فیض الاسلام کے مطابق، معاہدے پر مکمل عمل کو یقینی بنایا جائے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر حکومت معاہدے سے انحراف کرتی ہے تو میڈیا اور لوگوں کی طاقت سے اسکا مقابلہ کیا جائے گا۔

اس حصے سے مزید

ایف سی اہلکاروں کے کورٹ مارشل میں عدم پیش رفت پر عدالت برہم

سپریم کورٹ نے بلوچستان لاپتہ افراد کیس میں مبینہ ملوث اہلکاروں کے خلاف کارروائی سے متعلق رپورٹ طلب کرلی۔

زرداری اور نواز کے درمیان اہم ملاقات آج ہوگی

پیپلز پارٹی کا کہنا ہے کہ ملاقات میں دونوں رہنما ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال پر تبادلۂ خیال کریں گے۔

'حکومت گیلانی اور تاثیر کی رہائی میں سنجیدہ نہیں'

طالبان پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ حکومت نے علی حیدر اور شہباز تاثیر کی رہائی کا ان سے مطالبہ نہیں کیا: خورشید شاہ


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (1)

gilani
18 جنوری, 2013 18:23
بس ایک گزارش ھے کہ ڈبہ سنبھال کے رکھیں
مقبول ترین
بلاگ

میڈیا کے چٹخارے

پاکستانی میڈیا کو جتنی زیادہ آزادی ہے اسکی اپروچ اتنی ہی جانبدارانہ ہے، عوام کی پولرائزیشن میں میڈیا کا بہت بڑا ہاتھ ہے

ٹی ٹی پی نہیں تو پھر مذاکرات کیوں؟

عام آدمی کو صرف تحفظ چاہئے اور اگر مذاکرات یہ نہیں دے رہے تو ان کو مزید آگے بڑھانے سے کیا حاصل؟

جادو کا چراغ: نبض کے بھید اور ایک برباد محبت

بوڑھے دانا طبیب نے مختلف ناموں پر بدلتی نبض کو دیکھ کر لڑکی کی پراسرار بیماری کا علاج کیا-

سارے جہاں سے مہنگا - ریویو

فلم میں ایک اچھوتا خیال پیش کیا گیا ہے کہ کس طرح 'جگاڑ' کر کے ایک مڈل کلاس آدمی مہنگائی کا توڑ نکالتا ہے۔