17 اپريل, 2014 | 16 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

ممبئی حملے: ماسٹر مائنڈ کو دی گئی سزا ناکافی قرار

ڈیوڈ ہیڈلی کے وکیل رپورٹرز سے بات چیت کر رہے ہیں۔ فوٹو اے پی۔۔۔

نئی دہلی: ہندوستان کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ 2008 میں ہونے والے ممبئی حملوں کی منصوبہ بندی کرنے والے امریکی شہری کو 35 سال قید سے بھی زیادہ سخت سزا دینے چاہیے تھی، اس کے ساتھ ساتھ انہوں نے اسے ہندوستان کے حوالے کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔

چکاگو میں جمعرات کو ہونے والی سماعت کے دوران باون سالہ ڈیوڈ ہیڈلی نے امریکی حکام سے تعاون کرتے ہوئے ممبئی حملوں کے اہداف کا تعین کرنے کا اعتراف کیا تھا اور اسی کے باعث وہ موت کی سزا سے بچ پائے تھے اور انہیں 35 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

وزیر خارجہ سلمان خورشید نے ہندوستانی ٹی وی کو بتایا کہ اگر ہمارے بس میں ہوتا تو ہم اس کو مزید سخت سزا دیتے لیکن جج امریکہ میں انصاف کی فراہمی کے قوانین پر عمل درآمد کے پابند تھے۔

انہوں نے کہا کہ یہ تو محض ابتدا ہے، اس سے یہ پیغام پہنچانے میں مدد ملے گی کہ اس طرح کی کارروائیاں ہرگز برداشت نہیں کی جائینگی۔

گزشتہ نومبر ہندوستان نے ممبئی حملوں کے پاکستانی نژاد ملزم اجمل قصاب کو پھانسی دیدی تھی۔

ہیڈلی کو حوالے کرنے کے مطالبے کے سوال پر سلمان خورشید نے کہا کہ ہندوستان، امریکہ سے مسلسل ہیڈلی کو حولے کرنے کا مطالبہ کر رہا ہے۔

امریکی حکام کیس میں تعاون کرنے کے باعث ہیڈلی کو حوالے پر تیار نہیں ہیں، ہیڈلی کو 2009 میں شکاگو سے اس وقت گرفتار کیا گیا تھا جب وہ فلائٹ سے پاکستان کیلیے روانہ ہونے والے تھے۔

امریکی حکام نے کورٹ کو بتایا کہ ہیڈلی نے حکام سے تعاون کیا اور عسکریت پسند گروہ لشکر طیبہ کے حوالے سے اہم تفصیلات کی تھیں، ہندوستان نے لشکر طیبہ کو ان حملوں کا ذمے دار ٹھہرایا تھا۔

اس حصے سے مزید

ایٹمی ہتھیاروں میں پہل نہ کرنے کی پالیسی برقرار رکھیں گے ، مودی

بے جی پی نے پہلے کہا تھا کہ وہ حکومت بنانے کے بعد انڈیا کی ایٹمی پالیسی پر نظر ثانی اور تبدیلیاں کرے گی۔

ہندوستان میں بس حادثہ، چھ افراد ہلاک

حکام کے مطابق یہ حادثہ بس میں آگ لگنے سے پیش آیا جس میں کم ازکم چھ افراد جھلس کر ہلاک ہوگئے۔

انڈین خواجہ سراؤں کے لیے تیسری جنس کا درجہ

سپریم کورٹ نے ایک تاریخی فیصلے میں خواجہ سراؤں کو باضابطہ طور پر تیسری صنف تسلیم کرتے ہوئے ان کے لیے الگ درجہ بنا دیا۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

میڈیا کے چٹخارے

پاکستانی میڈیا کو جتنی زیادہ آزادی ہے اسکی اپروچ اتنی ہی جانبدارانہ ہے، عوام کی پولرائزیشن میں میڈیا کا بہت بڑا ہاتھ ہے

ٹی ٹی پی نہیں تو پھر مذاکرات کیوں؟

عام آدمی کو صرف تحفظ چاہئے اور اگر مذاکرات یہ نہیں دے رہے تو ان کو مزید آگے بڑھانے سے کیا حاصل؟

جادو کا چراغ: نبض کے بھید اور ایک برباد محبت

بوڑھے دانا طبیب نے مختلف ناموں پر بدلتی نبض کو دیکھ کر لڑکی کی پراسرار بیماری کا علاج کیا-

سارے جہاں سے مہنگا - ریویو

فلم میں ایک اچھوتا خیال پیش کیا گیا ہے کہ کس طرح 'جگاڑ' کر کے ایک مڈل کلاس آدمی مہنگائی کا توڑ نکالتا ہے۔