30 اگست, 2014 | 3 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

پی پی پی صوبے کے قیام میں مخلص نہیں، مسلم لیگ ن

قائد حزب اختلاف اور مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما چوہدری نثار علی خان۔ فائل فوٹو۔
قائد حزب اختلاف اور مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما چوہدری نثار علی خان۔ فائل فوٹو۔

اسلام آباد: قائد حزب اختلاف اور مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما چوہدری نثار علی خان نے بہاولپور جنوبی پنجاب صوبے کے حکومتی اعلان پر تنقید کرتے ہوئے الزام عائد کیا ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) صوبے کے قیام میں مخلص نہیں۔

اتوار کو ڈان نیوز کے مطابق، چوہدری نثار علی خان نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ صدر آصف علی زرداری سوداگری کے ماہر ہیں تاہم نیا صوبہ بنانا سوداگری یا لین دین نہیں ہے ۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ  گورنر پنجاب نے بہاولپور کے عوام کا سودا کیا ہے، بہاولپور صوبے کی علیحدہ قرارداد منظور ہوچکی ہے،

چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ ملک کے حالات گھمبیر ہیں، موجودہ مسائل نئے صوبوں کے قیام سے حل نہیں ہو سکتے۔

قائد حزب اختلاف کا کہنا تھا کہ پنجاب میں ن لیگ کی اکثریت کے باوجود  صوبے بنانے کیلیے کمیشن کی تشکیل سے متعلق مشاورت نہیں کی گئی بلکہ خود ساختہ قومی کمیشن بنایا گیا۔

انہوں نے کہا کہ صوبوں کے قیام سے متعلق کمیشن وفاق نے نہیں بلکہ صدر زرداری نے بنایا جس کا وہ اختیار  نہیں رکھتے۔

ان کے مطابق، صدر زرداری کے اسٹاف آفیسر کو قومی کمیشن کا چیئرمین بنادیا گیا اور کمیشن میں متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) اور عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) کے اراکین لیے گئے جن کا پنجاب میں ایک کونسلر بھی نہیں ہے۔

چوہدری نثار علی خان نے اس امید کا اظہار کیا کہ نگران وزیراعظم غیرجانبدار ہوگ۔

انہوں نے کہا کہ نگران وزیراعظم کے انتخاب کے لیے تحریک انصاف سے بھی مشاورت کریں گے۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ الیکشن کمیشن کرپٹ، نادہندہ اور بدعنوان عناصر کے خلاف کارروائی کرے۔

اس حصے سے مزید

شیخ رشید، جمشید دستی بھی استعفے دیں، پی ٹی آئی اراکین کی شکایت

عمران خان شیخ رشید کو استعفے پر قائل کرنے میں ناکام رہے، ذرائع تحریک انصاف۔

پی ٹی آئی اور پی اے ٹی کے رہنما ایک ہی پلیٹ فارم پر

مارچ کے آغاز کےبعد سے اب تک یہ پہلا رابطہ تھا، ایک روز قبل ڈاکٹر قادری نے دونوں جماعتوں کو ’سیاسی کزن‘ قرار دیا تھا۔

آئی ایس پی آرکابیان حکومتی منظوری سے جاری ہوا، وفاقی وزیر داخلہ

چوہدری نثارنےکہاہےکہ حکومت نےکسی کو ضامن اور ثالث نہیں بنایا,آئی ایس پی آرکابیان وزیراعظم کودیکھانے کےبعدجاری کیاگیا۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (2)

Israr Muhammad
27 جنوری, 2013 17:27
نئے صوبے اور سیاست آجکل ملک میں نئی صوبوں کا بہت زکر هے هر طرف هر جانب اس پر بحث هورهی هے ان دنوں اسکا ذکر صرف سیاسی نعرہ کے طور پر هورها هے اسکے سوا کچھ نہیں باقی صوبوں کے ان صوبوں یا صوبہ کی حمایت صرف اسلئے کرهی هے کۂ پنجاب کی بالادستی کو حتم کیا جاسکے اور پی پی اسکو پی م ن کو کارنر کرنے کیلئے استعمال کرنا چاهتی هے یۂ صرف ایک سیاسی نعرہ هے البتہ اگر صوبہ بہاولپور کا دبارہ احیاء کیا جائے تو یه ایک اصولی اور عوام کو قابل قبول هوگا کیونکہ بہاولپور کی ایک تاریخی حیثیت تھی اور ایک خودمختار ریاست تھی لسانی بنیادوں پر صوبہ کا قیام ایک تباہ کن فیصلہ هوگا صوبہ سرحد کے نام کی تبدیلی اس مطالبہ کا نکتہ آغاز تھا لیکن یاد رکھیں که صوبہ سرحد کا صرف نام تبدیل هوا تھا نیا صوبہ نہیں
israr
29 جنوری, 2013 11:34
نئے صوبے اور سیاست آجکل ملک میں نئی صوبوں کا بہت زکر هے هر طرف هر جانب اس پر بحث هورهی هے ان دنوں اسکا ذکر صرف سیاسی نعرہ کے طور پر هورها هے اسکے سوا کچھ نہیں باقی صوبوں کے ان صوبوں یا صوبہ کی حمایت صرف اسلئےکر رهی هے کۂ پنجاب کی بالادستی کو حتم کیا جاسکےاور پی پی اسکو پی م ن کو کارنر کرنےکیلئے استعمال کرنا چاهتی هے یۂ صرف ایک سیاسی نعرہ هے اور پی پی اسکو سیاسی نعرہ کے طور پر استعمال کریگی کیونکہ اس کی موجودۂ حکومت پاکستان کی بدترین کرپٹ ترین ناگام ترین حکومت هے عوام کے پاس جانے کیلئے ان کے پاس کچھ بھی نہیں یاد رہے که پنجاب کی موجوده حکومت نسبتآ بہتر هے اس وجہ سے پی پی اس کو خطره مانتی هے
سروے
مقبول ترین
قلم کار

اسلام آباد کا تماشا

عمران خان کو یہ تسلیم کرنا چاہیے کہ جوڈیشل کمیشن ایک کمزور وزیر اعظم کے اثر و رسوخ سے آزاد ہو کر تحقیقات کر سکے گا.

جمہوریت کے تسلسل کی ضرورت

حکومت نےکس قدر عجلت میں مذاکرات کا فیصلہ کیا، اس سے معاملات کے اوپر جی ایچ کیو کی گرفت کا اچھی طرح اندازہ ہوجاتا ہے۔

بلاگ

اجتماعی سیاسی قبر

فوج کو سیاسی معاملات میں شرکت کی دعوت دینا اس بات کا ثبوت ہے کہ سیاستدان سیاسی معاملات سے نمٹنے کی طاقت نہیں رکھتے۔

پکوانی کہانی- سندھی بریانی

ہر قسم کی بریانیوں میں سے یہ بریانی منفرد حیثیت رکھتی ہے جو سندھی طریقے سے بہت زیادہ مصالحوں کے ساتھ تیار ہوتی ہے۔

مووی ریویو: مردانی - پاورفل کہانی، بہترین پرفارمنس

بولی وڈ اداکار رانی مکھرجی اور طاہر بھاسن دونوں ہی اپنی بولڈ پرفارمنس کے لئے تعریف کے لائق ہیں۔

عظیم مقاصد، پر راستہ؟

اس طوفان کے نتیجے میں ان چاہی افرا تفری پھیل سکتی ہے، اسلیے اچھے مقاصد کے لیے ایسے راستے اختیار نہیں کیے جانے چاہییں۔