25 اپريل, 2014 | 24 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

کامران فیصل نے خود کشی کی، فرانزک رپورٹ

۔ —اے پی فوٹو
۔ —اے پی فوٹو

اسلام آباد: اطلاعات کے مطابق رینٹل پاور کیس کی تحقیقات کرنے والے قومی احتساب بیورو کے افسر کامران فیصل کی موت پر کیمیکل (فرانزک) رپورٹ اسلام آباد پولیس کو موصول ہو چکی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ رپورٹ نے خود کشی کو کامران فیصل کی موت کی وجہ قرار دیا ہے۔

کہا جا رہا ہے کہ فیصل کے والد عبدالحمید نے رپورٹ کو مسترد کرتے ہوئے اسے پیر کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا ارادہ کیا ہے۔

متعلقہ پولیس افسر نے ڈان سے گفتگو میں رپورٹ کے موصول ہونے یا نہ ہونے کی تصدیق سے انکار کیا ہے۔

ایک پولیس افسر نے نام نہ ظاہر کرنے پر بتایا کہ: ‘‘رپورٹ میں گردن کی ٹوٹی ہڈیوں کا ذکر ہے جو خودکشی کی نشاندہی کرتی ہے۔  ’’

انہوں نے رپورٹ کے حوالے سے مزید بتایا کہ 'مرحوم کے جسم پر کسی قسم کے تشدد یا زخم کے نشان کا ذکر نہیں تاہم یہ ضرور کہا گیا ہے کہ دم گھٹنے سے ان کی آنکھیں باہر آ گئی تھیں'۔

رپورٹ کے مطابق، کامران فیصل خود کشی کے لیے ذہنی طور پر تیار تھے کیوں کہ انہوں نے واقعہ سے نو گھنٹے پہلے تک کچھ بھی نہیں کھایا پیا تھا۔

'کامران کو پتہ تھا کہ چونکہ ان کی لاش کئی گھنٹوں بعد ملے گی لہٰذا اُن کا معدہ خالی ہونا چاہیے'۔

پولیس افسر نے رپورٹ کے حوالے سے مزید بتایا کہ مرحوم شدید ڈپریشن کا شکار تھے اور وہ اس کے لیے دوائیں بھی لے رہے تھے۔

سیکریٹریٹ تھانے کے ایک اور پولیس اہلکار نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر بتایا کہ ساجد نامی ایک شخص فیڈرل لاجز میں فیصل کامران کے کمرہ میں رہ رہا تھا اور وہ واقعہ سے دو دن پہلے چھٹی پر گیا تاہم اب تک اس کی واپسی نہیں ہوئی ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ 'ہمیں پتہ چلا ہے کہ رپورٹ میں خود کشی کی تصدیق کی گئی ہے، لہٰذا اب ہم تفتیش کے حوالے تذبذب کا شکار ہیں'۔

انہوں نےبتایا کہ ساجد سے تفتیش اعلیٰ افسران کی ہدایات کے بعد ہی کی جائے گی۔

خیال رہے کہ سپریم کورٹ کے ججوں  جسٹس جواد ایس خواجہ اور جسٹس خلجی عارف پر مشتمل دو رکنی بینچ نے متعلقہ کیس میں نیب کے چیئرمین فصیح بخاری، اسلام آباد کے انسپکٹر جنرل اور پولی کلینک کے میڈیکل سپریٹنڈنٹ کو نوٹس جاری کر رکھے ہیں۔

بینچ نے آج (پیر سے) شروع ہونے والی سماعت کے لیے کیس کا ریکارڈ بھی طلب کر رکھا ہے۔

اس حصے سے مزید

مشرف غداری کیس: 'ایف آئی اے کی رپورٹ فراہم نہ کرنا بدنیتی ہے'

سپریم کورٹ نے اپنے فیصلوں میں بنیادی حقوق کو ہر قانون سے بالاتر قرار دیا ہے، بیرسٹر فروغ نسیم۔

'پاکستانی اداروں پر ہندوستانی الزامات بے بنیاد ہیں'

پاکستان نے صحافی حامد میر پر حملے سے متعلق ہندوستانی میڈیا کے پاکستانی سیکورٹی اداروں پرلگائے گئے الزامات کو مسترد کردیا

سات سالوں میں 2090 فرقہ وارانہ ہلاکتیں

سینیٹ میں حزب اختلاف کے اراکین نے حکومتی اعداد و شمار کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ہلاکتوں کی تعداد کہیں زیادہ ہے۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

مقدّس ریپ

دو دن وہ اسی گاؤں میں ماں کے بازؤں میں تڑپتی رہی۔ گھر میں پیسے ہی کہاں تھے کہ علاج کے لئے بدین تک ہی پہنچ پاتے۔

میڈیا اور نقل بازی کا کینسر

ایسا نہیں کہ میں کوئی پہلا انسان ہوں جس کے خیالات پر نقب لگائی گئی ہو، مگر آخری ضرور بننا چاہتا ہوں

!مار ڈالو، کاٹ ڈالو

مجھے احساس ہوا کہ مجھے اس پر شدید غصہ آ رہا ہے اور میں اسے سچ بولنے پر چیخ چیخ کر ڈانٹنا چاہتا ہوں-

خطبہء وزیرستان

کس سازش کے تحت 'آپکو' بدنام کرنے کے لئے دھماکے کیے جاتے ہیں؟ کس صوبے کے مظلوم عوام آپکے بھائی ہیں؟