25 جولائ, 2014 | 26 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

عاصمہ جہانگیر بطور نگراں وزیراعظم قبول نہیں،عمران خان

تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان عوامی جلسے سے خطاب کر رہے ہیں۔ فائل فوٹو اے پی۔۔۔
تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان عوامی جلسے سے خطاب کر رہے ہیں۔ فائل فوٹو اے پی۔۔۔

لاہور: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ ان کی پارٹی کو عاصمہ جہانگیر بطور نگران وزیراعظم قبول نہیں۔

پیر کو لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ نگران وزیراعظم کے حوالے سے پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل ن) اور پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے درمیان مک مکا ہوچکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایسا پل کبھی نہ بننے کے لیے ٹوٹ چکا ہے جو تحریک انصاف اور ن لیگ کو ملا سکے۔

ان کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن کے ساتھ مل کر احتجاج کرنے کیبجائے تحریک انصاف علیحدہ احتجاج کرے گی۔

پی ٹی آئی چیئرمین کا کہنا تھا کہ صوبہ جنوبی پنجاب 'الیکشن اسٹنٹ' کے سوا کچھ بھی نہیں ہے۔

اس موقع پر انہوں نے صدر آصف علی زرداری سے استعفٰی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ انکی موجودگی میں شفاف انتخابات ممکن نہیں ہیں۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ صدر زرداری کے مستعفی ہوتے ہی چیئرمین سینیٹ کا صدر بننا پی ٹی آئی کیلیے قابل قبول ہوگا۔

انہوں نے مزید کہا کہ تحریک انصاف انتخابات کا بائیکاٹ نہیں کرے گی اور الیکشن جیت کر دکھائے گی۔

اس حصے سے مزید

لاہور: تین سالہ بچی کے ساتھ ریپ کا انسانیت سوز واقعہ

نامعلوم افراد بچی کو ریپ کا نشانہ بنا کر اُسے گرین بیلٹ کے قریب پھینک کر فرار ہو گئے۔ بچی کی حالت تشویشناک ہے۔

لانگ مارچ حتمی میدان جنگ ہو گا، عمران

'پی ٹی آئی کا 'آزادی مارچ' ٹی ٹوئنٹی نہیں بلکہ ٹیسٹ میچوں کی ایک سیریز ہو گا۔'

گجرات: زمیندار نے دس سالہ بچے کے دونوں بازو کاٹ دیے

معمولی رنجش پر زمیندار کے بیٹے نے تبسم شہزاد کو موٹر پر دھکا دیدیا جس کی زد میں آکر بچے کے دونوں بازو جسم سے جدا ہوگئے


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

تھوڑا سا احترام

آپ ایک مایوس، خوفزدہ بیوروکریسی سے کیا توقع کرسکتے ہیں جنہیں اپنی سمت کا علم نہ ہو؟

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بلاگ

گھریلو تشدد: پاکستانی 'کلچر' - حقیقت کیا ہے؟

پاکستانی سماج میں عورت مرد کی جائداد اور اس سے کمتر ہے چناچہ اس کے ساتھ کسی قسم کا سلوک روا رکھنا مرد کا پیدائشی حق ہے-

ریاستی تنہائی اور اجتماعی مہاجرت

جب تک سوچنے اور سوچ کے اظہار کے لیے ممکنہ حد تک ازادی موجود نہ ہو تب تک سماج میں تکثیریت پروان نہیں چڑھ سکتی

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔