26 جولائ, 2014 | 27 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

کراچی: اپوزیشن جماعتوں کا دھرنا ختم

۔۔۔۔فائل فوٹو۔
۔۔۔۔فائل فوٹو۔

کراچی: چیف الیکشن کمشنر فخرالدین جی ابراہیم کی یقین دہانی کے بعد کراچی میں صوبائی الیکشن کمیشن کے دفتر کے سامنے اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے تین روزہ احتجاجی دھرنا ختم کردیا گیا۔

ڈان نیوز کے مطابق، چیف الیکشن کمشنر نے منگل سے کراچی میں ووٹوں کی تصدیقی عمل میں فوج اور ایف سی اہلکاروں کو شامل کرنے کی یقین دہانی کرائی۔

تاہم اپوزیشن جماعتوں نے حلقہ بندیوں اور انتخابات کے موقع پر پولنگ اسٹیشنوں میں فوج کی تعیناتی کے مطالبے کیساتھ احتجاجی تحریک جاری رکھنے کا اعلان کردیا۔

اس سے قبل جماعت اسلامی کے رہنما محمد حسین محنتی کا کہنا تھا کہ جب تک کراچی میں حلقہ بندیوں اور انتخابات میں پولنگ اسٹیشنوں میں فوج کی تعیناتی کی یقین دہانی نہیں کرائی جاتی اس وقت تک احتجاجی تحریک جاری رہے گی۔

دھرنے سے جعیت علماء اسلام ف کے مرکزی رہنما حافظ حسین احمد نے اپنے خطاب میں کہا کہ این آر او زدہ حکمران صاف اور شفاف انتخابات کے حق میں نہیں ہیں جبکہ عدالت عظمٰی کے احکامات کو نظر انداز کیاجارہا ہے۔

 دوسری جانب ایم کیوایم حقیقی کے چیئرمین آفاق احمد نے فخرالدین جی ابراہیم سے ملاقات کی اور انتخابی فہرستوں میں دھاندلی کے حوالے سے اپنے تحفظات کا اظہار کیا۔

اس حصے سے مزید

اسلام آباد فوج کے حوالے کرنا چوہدی نثار کی ناکامی قرار

قائد حزب اختلاف خورشید شاہ کا کہنا ہےکہ جن لوگوں سے ایک شہر نہیں سنبھل سکتا وہ ملک کیا سنبھالیں گے۔

کراچی: پی ایس 114 میں دوبارہ انتخابات کا حکم

ایم کیو ایم کے رؤف صدیقی نے پی ایس 114 سے مسلم لیگ (ن) کے عرفان اللہ مروت کی کامیابی کو چیلنج کیا تھا۔

ساٹھ فیصد کراچی کی بجلی بحال، کے الیکٹرک

کے الیکٹرک کےمطابق نیشنل گرڈ لائن میں خرابی کےباعث کراچی کی بجلی معطل ہوئی تھی جو کہ اب بحال ہونا شروع ہو گئی ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

تھوڑا سا احترام

آپ ایک مایوس، خوفزدہ بیوروکریسی سے کیا توقع کرسکتے ہیں جنہیں اپنی سمت کا علم نہ ہو؟

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بلاگ

گھریلو تشدد: پاکستانی 'کلچر' - حقیقت کیا ہے؟

پاکستانی سماج میں عورت مرد کی جائداد اور اس سے کمتر ہے چناچہ اس کے ساتھ کسی قسم کا سلوک روا رکھنا مرد کا پیدائشی حق ہے-

ریاستی تنہائی اور اجتماعی مہاجرت

جب تک سوچنے اور سوچ کے اظہار کے لیے ممکنہ حد تک ازادی موجود نہ ہو تب تک سماج میں تکثیریت پروان نہیں چڑھ سکتی

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔