22 ستمبر, 2014 | 26 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

ہندوستانی فنکاروں کا مہدی حسن کو خراج تحسین

Legendary playback singer Lata Mangeshka
میرے لیئے مہدی حسن کا درجہ ایشور جیسا ہے، لتا منگیشکر۔—اے ایف پی فوٹو

مہدی حسن کے انتقال پر پاکستان کے ساتھ ساتھ دنیا بھر میں ان کے چاہنے والوں پر افسردگی طاری ہے ۔ ہندوستان میں موسیقی سے وابستہ اہم شخصیات نے کہا ہے کہ مہدی حسن کا خلاء کبھی پُر نہیں ہوگا۔

لتامنگیشکر دنیا بھر میں بلبلِ ہند کا خطاب پانے والی لیجنڈ گلوکارہ لتا منگیشکر کا کہنا ہے کہ مہدی حسن کا درجہ ان کیلئے ایشور جیسا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مہدی حسن کے انتقال پر انہیں بہت صدمہ پہنچا ہے۔

لتا کا کہنا تھا کہ انہوں نے مہدی حسن کی علالت کے دوران انہیں ٹیلی فون کیا لیکن وہ کسی کو پہچان نہیں پاررہے تھے۔

جاوید اختر بے شمار مقبول گیتوں اور غزلوں کے خالق جاوید اختر نے کہا کہ غزل کو مہدی حسن نے ایک نیا نکھار دیا۔

'مہدی حسن کسی کی گونج نہیں اپنی آواز تھے۔ان کا مقابلہ کسی سے بھی نہیں کیا جاسکتا۔'

پنکج ادھاس

غزل گائیکی کے حوالے بین الاقوامی شہرت رکھنے والے پنکج ادھاس کا کہنا تھا : 'جگجیت سنگھ اور مہدی حسن تھے تو وہ سمجھتےتھے کہ فن کی دنیا میں ان کے بڑے موجود ہیں جن کے دامن میں انہیں سکھانے اور بتانے کیلئے بہت کچھ ہےلیکن اب دونوں نہیں رہےتو وہ تنہا محسوس کرنے لگے ہیں'۔

ہری ہرن

ہندوستان میں غزل گائیکی کے افق پر ایک اور دمکتے ستارے ہری ہرن نے کہا کہ انہیں اپنی چمک ماند پڑتی لگنے لگی ہےکیونکہ وہ مہدی حسن کو گرو مانتے تھے اور اب ان کا یہ گرو دنیا میں نہیں رہا۔

اس حصے سے مزید

ڈرامہ ریویو: چپ رہو - حساس ترین موضوع پر بہترین پیشکش

زیادتی جیسے واقعات ہر وقت خبروں میں رہتے ہیں اس حوالے سے یہ ڈرامہ شعور اجاگر کرنے میں اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

فواد اور سونم کی 'خوبصورت' کہانی دل جیتنے کیلئے تیار

پاکستانی اسٹار اس فلم کے ذریعے آج دنیا کی دوسری بڑی فلمی صنعت میں اپنے آپ کے منوانے کی کوشش کریں گے۔

بگ باس: سلمان کا فی قسط معاوضہ کروڑوں میں

بولی وڈ اداکار بگ باس سیزن 8 کی ہر قسط کے لیے پانچ سے سات کروڑ روپے کا معاوضہ لیں گے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

پاکستان کی "مڈل کلاس" بغاوت

پاکستان کے مڈل کلاس لوگ ہی جمہوریت کے سب سے بڑے مخالف ہیں اور کچھ کیسز میں تو جمہوریت کی مخالفت بغاوت کی حد تک شدید ہے۔

!میرے پیارے اسلام آباد

میں آپ سے معافی چاہتا ہوں کہ میں نے آپ کی جانب دو دھرنے بھیجے ہیں، جنہوں نے آپ کا امن و سکون تباہ کر دیا ہے۔

بلاگ

بلوچ نیشنلزم میں زبان کا کردار

لسانی معاملات پر غیر دانشمندانہ طریقہ سے اصرار مزید ناراضگی اور پیچیدگیوں کا سبب بن سکتا ہے، جو شاید مناسب قدم نہیں۔

خواندگی کا عالمی دن اور پاکستان

تعلیم کو سرمایہ کاروں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے جن کے لیے تعلیم ایک جنس ہے جسے بیچ کر منافع کمایا جاسکتا ہے-

ڈرامہ ریویو: چپ رہو - حساس ترین موضوع پر بہترین پیشکش

زیادتی جیسے واقعات ہر وقت خبروں میں رہتے ہیں اس حوالے سے یہ ڈرامہ شعور اجاگر کرنے میں اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

میں باغی ہوں

اس ملک میں کہیں قانون کی حکمرانی نہیں، ہر جگہ لوٹ مار مچی ہے- کسی کو قانون کا پاس نہیں- تبدیلی آئی تو سب کا احتساب ہوگا-